امریکہ میں کرونا وائرس سے ساڑھے 14 ہزار اموات

مریضوں کی تعداد اس قدر زیادہ ہے کہ اب اسپتالوں پر دباو کم کرنے کیلئے سینٹرل پارک کو فیلڈ اسپتال میں تبدیل کیا جاچکا ہے۔
نیویارک میں ہلاکتوں کا روز ریکارڈ ٹوٹنے لگا، ایک لاکھ 51 ہزار کیسز رپورٹ ہوچکے ہیں اور تقریبا 8 ہزار افراد کی حالت تشویشناک ہے۔
میئر بل دی بلاسیو نے تسلیم کیا ہے کہ اموات تخمینوں سے زیادہ ہوسکتی ہیں، انھوں نے اس سوال کا جواب دینے سے گریز کیا کہ لاشیں کیسے اسٹور کی جائیں گی۔
میئر نے اس اہم ایشو پر گفتگو سے گریز ایسے وقت میں کیا ہے۔
یہ قیاس کیا جارہا ہے کہ ہارٹ آئرلینڈ کو عارضی قبرستان کے طور پر استعمال کیا جاسکتا ہے۔ اس سے پہلے ہارٹ آئرلینڈ کی ڈرون فوٹیج منظر عام پر آئی تھی، اس میں قبروں کی کھدائی ہوتی دیکھی جاسکتی ہے۔
امریکا میں کورونا سے ہلاک افراد کی تعداد لگ بھگ 15 ہزار اور کیسز ساڑھے 4 لاکھ کے قریب ہوگئے ہیں ، صرف نیویارک میں 6 ہزار 268 اموات ہوچکی ہیں۔
نیویارک، نیوجرسی، مشی گن، کیلی فورنیا، لوزیانا، فلوریڈا، الی نوائے اور ٹیکساس سمیت پورے امریکا میں ہلاکتوں کی شرح بڑھ رہی ہے اور 16 اپریل خطرناک ترین دن قرار دیا جارہا ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

تبصرہ کرنے سے پہلے آپ کا لاگ ان ہونا ضروری ہے۔

اسی طرح کی مزید پوسٹس

مینو