پاکستان پہ کرونا وائرس کا بہت بڑا خطرہ منڈلانے لگا.

پاکستان میں سیاسی انتظامیہ کے روئیے کی وجہ سے غیرسیاسی انتظامیہ، بیورو کریسی، مکمل طور پر کام چھوڑ کر بیٹھے گئی ہے اور صرف حکومتی سیاستدانوں کے حکم کے مطابق معاملات چلائے جا رہے ہیں. حکومتی سیاستدانوں کی ناتجربہ کاری کی وجہ سے اب انتظامی امور شدید بد انتظامی کا شکار ہوتے جا رہے ہیں.
پہلےایران بارڈر سےہزاروں شیعہ زائرین پاکستان میں بغیر کرونا سکریننگ داخل کئے گئے.
پھر کچھ شیعہ زائرین کے پازیٹو ٹیسٹ آنے کے باوجود انہیں گھر جانے دیا گیا.
اب وزیراعظم عمران خان کے حکم پہ حکومت نےطورخم بارڈر کھول کر بغیر کسی سکریننگ کے ہزاروں لوگ پاکستان میں داخل کر دئیے ہیں.
‏عمران خان کی اسپیشل ہدایت پر پاک افغان بارڈر کھول دیا گیا ہے.

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

تبصرہ کرنے سے پہلے آپ کا لاگ ان ہونا ضروری ہے۔

اسی طرح کی مزید پوسٹس

مینو