9 ماہ کے دوران دنیا میں ساڑھے گیارہ کروڑ بچوں کی پیدائش متوقع

اقوام متحدہ کے ادارہ برائے اطفال یونیسیف کی رپورٹ کے مطابق کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے ابتدائی 9 ماہ کے دوران دنیا میں ساڑھے گیارہ کروڑ بچوں کی پیدائش متوقع ہے۔

یونیسیف کی جانب سے ایک رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ کورونا وائرس کے دوران جاری لاک ڈاؤن میں لاکھوں خواتین حاملہ ہوئی ہیں۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے بعد ابتدائی 9 ماہ میں صرف جنوبی ایشیا میں سب سے زیادہ 2 کروڑ 90 لاکھ سے زائد بچوں کی پیدائش کا امکان ہے۔

رپورٹ کے مطابق بھارت میں 2 کروڑ، پاکستان میں 50 لاکھ، بنگلادیش میں 24 لاکھ اور افغانستان میں 10 لاکھ بچوں کی پیدائش متوقع ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ لاک ڈاؤن کی وجہ سے جان بچانے والے صحت کے اداروں کی خدمات متاثر ہوسکتی ہیں جس سے ماں اور بچے کی زندگیوں کو خطرات لاحق ہیں۔

رپورٹ کی بنیاد پر بچوں کے عالمی ادارے نے حکومتوں سے اپیل کی ہے کہ کورونا کے حوالے سے بھی حاملہ خواتین کا خیال رکھا جائے اور صحت کی سہولیات فراہم کی جائیں۔

خیال رہے کہ پاکستان اور بھارت میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے لاک ڈاؤن جاری ہے جبکہ دونوں ممالک میں مہلک وائرس تیزی سے پھیل رہا ہے۔

پاکستان میں اب تک مہلک وائرس سے 637 افراد جاں بحق اور ساڑھے 28 ہزار سے زائد متاثر ہیں۔

وہیں بھارت میں مہلک وائرس اب تک 2 ہزار افراد کی جان لے چکا ہے جبکہ متاثرہ مریضوں کی تعداد 60 ہزار سے زائد ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو