خدشات درست ثابت، ایل این جی کے معاملے پر حکومت مشکل میں پھنس گئی

ایل این جی کے معاملے پر حکومت مشکل میں پھنس گئی۔

تفصیلات کے مطابق خدشات درست ثابت ہوئے ہیں اور فروری کے لیے کم سے کم 23.4 فیصد اور 20.8 فیصد کی ایل این جی کی بڈز آگئی ہیں۔

اس طرح حکومت مشکل میں پھنس گئی ہے کہ اگر بڈز منظور کیں تو 5 ارب روپے کا نقصان ہوگا، اگر بڈز منظور نہ کیں تو فروری میں گیس کا بحران مزید سنگین ہوجائے گا جب کہ فرنس آئل سے مہنگی بجلی پیدا کرنے سے اربوں کا نقصان الگ ہوگا۔

حقائق کے مطابق سارا سال (ن) لیگ کے طویل مدتی معاہدوں کو مہنگا کہہ کر اسپاٹ قیمتوں پرسستی گیس خریدنے کا کریڈٹ لیتے رہے۔

تاہم جب دیر سے ٹینڈر کرنے کی وجہ سے ان سردیوں میں (ن) لیگ کے طویل المدتی معاہدوں سے بہت مہنگی گیس خریدی تو قیمت کم دکھانے کے لیے (ن) لیگ کے طویل مدتی معاہدوں کو بھی اوسط قیمت میں شامل کردیا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

اسی طرح کی مزید پوسٹس

مینو