روسی و برطانوی کورونا ویکسین کو یکجا کرنے کا فیصلہ

برطانیہ اور روس نے فیصلہ کیا ہے کہ وہ اپنی اپنی تیار کردہ ویکسین کو یکجا کرکے کورونا وائرس کا مقابلہ کریں گے۔

برطانوی نشریاتی ادارے کی رپورٹ کے مطابق برطانیہ میں آکسفورڈ یونیورسٹی کی جانب سے تیار کردہ کورونا ویکسین ‘آسٹرا زینیکا’ اور روس کی تیار کردہ ویکسین ‘اسپوٹنگ وی’ کو ملاکر ایک زیادہ طاقتور ویکسین تیار کرنے پر غور کیا جارہا ہے۔

اس آزمائش میں برطانوی اور روسی سائنسدانوں پر مشتمل ٹیم حصہ لے گی اور دیکھا جائے گا کہ آیا دونوں ویکسینز کی آمیزش سے طیار ہونے والی نئی ویکسین کورونا کیخلاف زیادہ مؤثر ہوتی ہے یا نہیں۔

اس نئی ویکسین کی آزمائش روس میں ہوگی اور اس میں 18 سال سے زائد عمر کے افراد کو شامل کیا جائے گا البتہ کتنے رضاکار اس میں حصہ لیں گے یہ معلوم نہیں۔

کورونا وائرس کی برطانوی اور روسی ویکسین ایک ہی طرح سے کام کرتی ہیں کیوں کہ دونوں کو Sars-CoV-2 کے اسپائیک پروٹین سے حاصل کردہ جینیاتی مواد سے تیار کیا گیا ہے۔

اس کے علاوہ امریکی و جرمنی کمپنی کے اشتراک سے تیار کردہ ‘فائزر بائیو این ٹیک ویکسین’ بھی میدان میں ہے جس کے استعمال کی منظوری برطانیہ، کینیڈا، بحرین اور سعودی عرب دے چکے ہیں جبکہ امریکا میں اس پر غور جاری ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو