ای یو ڈس انفو لیب نے بھارت کا جھوٹا اور بھیانک چہرہ بے نقاب کیا، علی رضا سید

چیئرمین کشمیر کونسل ای یو علی رضا سید نے کہا ہے کہ یورپ کے ایک اہم ادارے “ای یو ڈس انفو لیب” نے اپنی غیرجانبدارانہ تحقیقات کے ذریعے بھارت کا جھوٹا اور اصل بھیانک چہرہ بے نقاب کیا ہے۔

ای یو ڈس انفو لیب کی طرف سے یورپ میں غلط اطلاعات و منفی پروپیگنڈہ پھیلانے والے پاکستان مخالف بھارتی نیٹ ورک کے انکشاف کا خیرمقدم کرتے ہوئے اپنے ایک بیان میں علی رضا سید نے ان انکشافات کو اہم پیشرف قرار دیا ہے۔

واضح رہے کہ بلجئیم کے دارالحکومت برسلز میں قائم ای یو ڈس انفو لیب کی تحقیقات میں بتایا گیا ہے کہ یہ بھارتی نیٹ ورک جنیوا میں اقوام متحدہ کی کونسل برائے انسانی حقوق (یو این ایچ سی آر) اور برسلز میں یورپی پارلیمان پر اثر انداز ہونے کے کوشش کرتا رہا ہے اور مشکوک یا جعلی این جی اوز، سات سو سے زائد جعلی میڈیا اداروں اور فرضی شناخت اختیار کر کے یا دوسروں کی شناخت چرا کراپنے مقاصد حاصل کرتا رہا۔

علی رضا سید نے کہاکہ ای یو ڈس انفو لیب کے بھارت کے بارے میں حقائق پر مبنی انکشافات کے بعد دنیا کی آنکھیں کھل جانی چاہئیں۔

چیئرمین کشمیرکونسل ای یو نے مزید کہا کہ بھارت ایک مدت سے یورپ کو پاکستان سے متعلق گمراہ کر رہا تھا اور مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالیوں کو دنیا سے چھپا رہا تھا۔

بھارت جھوٹے پروپیگنڈے کے ذریعے اپنا بھیانک اور ظالمانہ چہرہ دنیا سے چھپاتا رہا ہے، لیکن جھوٹ زیادہ مدت تک نہیں چل سکتا، بالآخر اسے بے نقاب ہونا ہی ہوتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں پچھلے سال جب سے جموں و کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کی گئی ہے، بھارت نے ظلم و بربریت میں اضافہ کر دیا ہے اور اس متنازع خطے کے شہریوں کو انکے بنیادی حقوق سے محروم کردیا ہے۔

علی رضا سید نے کہا کہ دنیا کو معلوم ہونا چاہیے کہ کشمیریوں کے علاوہ، بھارت میں بسنے والی دیگر اقوام بھی مودی حکومت جو فاشزم اور انتہا پسندی کو فروغ دے رہی ہے، اور انکے شر سے کوئی محفوظ نہیں۔ بھارت ان مظالم کو چھپانے کے لیے اپنے خفیہ نیٹ ورک کے ذریعے پروپیگنڈہ کرتا رہتا ہے تاکہ دنیا اسکے ان کالے کرتوتوں سے بےخبر رہے۔

چیئرمین کشمیر کونسل ای یو نے عالمی برادری خصوصاً یورپی یونین سے مطالبہ کیا کہ وہ ہرگز مقبوضہ کشمیر کی خراب صورتحال پر بھارتی پروپیگنڈے میں نہ آئے۔

علی رضا سید نے اس عزم کا اظہار کیا کہ ان کی تنظیم کشمیر کونسل ای یو بھارتی مظالم اور بھارت کے جھوٹ کو بے نقاب کرنے کے لیے اپنی کوششیں جاری رکھے گی۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

اسی طرح کی مزید پوسٹس

مینو