مریم نواز سمیت لیگی رہنماؤں کیخلاف 4 مقدمات درج

مینار پاکستان پر پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کے جلسےکے لیے مریم نواز کی قیادت میں عوامی رابطہ مہم کے باعث مریم نواز سمیت دیگر لیگی رہنماؤں کے خلاف 4 مقدمات درج کر لیے گئے۔

مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز سمیت دیگر لیگی رہنماؤں کے خلاف 4 مقدمات اچھرہ، گوالمنڈی، لوہاری گیٹ اور مزنگ پولیس اسٹیشن میں درج کیے گئے ہیں۔

گوالمنڈی پولیس نے پٹواری ظفر عباس کی مدعیت میں 2 مقدمات درج کیے، ایف آئی آر میں فیصل، چوہدری ارشد، عامر خان اور عرفان بٹ کو نامزد کیا گیا ہے جبکہ 100 سے زائد نامعلوم لیگی کارکنوں کو بھی ایف آئی آر میں نامزد کیا گیا ہے۔

لوہاری گیٹ میں مقدمہ پٹواری ملک مبشر کی درخواست پر درج کیا گیا ہے، ایف آئی آر میں لیگی رہنما مریم نواز، کاشف گجر، محمد طارق اور محمد جاوید کو نامزد کیا گیا جبکہ مقدمے میں ساؤنڈ سسٹم فراہم کرنے والے عبدالرحمان کو بھی نامزد کیا گیا ہے۔

علاوہ ازیں مزنگ پولیس کے مقدمے میں مریم نواز سمیت 200 سے زائد کارکن نامزد ہیں، پولیس نے مقدمہ پٹواری شاہ نواز کی درخواست پر درج کیا جبکہ اچھرہ میں مقدمہ گرد اور محمد منشا کی مدعیت میں درج کیا گیا۔

ایک مقدمہ ہوٹل کے مالک کے خلاف بھی درج کیا گیا ہے جس میں مریم نواز اور دیگر لیگی رہنماؤں نے کھانا کھایا تھا۔

لیگی رہنماؤں کے خلاف دائر مقدمات میں روڈ بلاک کرنے، اشتعال انگیز تقاریر اور ساؤنڈ ایکٹ کی خلاف ورزی کی دفعات شامل ہیں۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز نائب صدر (ن) لیگ مریم نواز کی سربراہی میں عوامی رابطہ مہم کے لیے جاتی عمرہ سے ریلی نکالی گئی تھی جس میں (ن) لیگ کے مرکزی رہنماؤں سمیت کارکنوں کی بڑی تعداد شریک تھی۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

اسی طرح کی مزید پوسٹس

مینو