یورپ میں PIA پر پابندی پاکستانی وزیر ہوابازی کے بیان کے بعد لگی

یورپین یونین ایوی ایشن سیفٹی ایجنسی کے ترجمان کا کہنا ہے کہ یورپ میں پی آئی اے پر پابندی پاکستانی وزیر ہوا بازی کے بیان کے بعد لگائی گئی تھی۔

یورپین یونین کے فضائی تحفظ کے ادارے (EASA) نے کہا ہے کہ جولائی سے لے کر اب تک پاکستان کی کوششیں اطمینان بخش رہی ہیں لیکن پاکستان کو اس حوالے سے مزید اقدامات اُٹھانے کی ضرورت ہے۔

یورپین یونین ایوی ایشن سیفٹی ایجنسی کے ترجمان اسٹیفن ڈی کیرمیکر نے ایک سوال کے جواب میں آن لائن دیئے گئے انٹرویو میں کہا کہ پی آئی اے پر یورپ میں پابندی پاکستانی وزیر ہوابازی کے لائسنس والے بیان کے بعد عائد کی گئی تھی۔

ترجمان نے کہا کہ جولائی سے لے کر اب تک پاکستان کی کوششیں کافی حد تک اطمینان بخش ہیں لیکن جعلی لائسنس اور حفاظت کے حوالے سے اسے مزید قابل تسلی اقدامات جاری رکھنے کی ضرورت ہے۔

اس کے ساتھ ہی انہوں نے واضح کیا کہ جب سے 2 پاکستانی فضائی کمپنیوں کو حفاظتی فہرست میں شامل کیا گیا تھا، اس وقت سے اب تک کچھ بھی نہیں بدلا ہے۔

نہ ہی کسی ملک کو فہرست سے ہٹایا گیا اور نہ ہی کسی کو نیا شامل کیا گیا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

اسی طرح کی مزید پوسٹس

مینو