اسلام آباد ہائیکورٹ نے کابینہ کمیٹی برائے نجکاری کی تشکیل غیر قانونی قرار دیدی

اسلام آباد ہائیکورٹ نے کابینہ کمیٹی برائے نجکاری کی تشکیل غیر قانونی قرار دے دی۔

اسلام آباد ہائیکورٹ نے کابینہ کمیٹی کی تشکیل کے خلاف مسلم لیگ ن کی درخواست منظور کرلی۔

عدالت نے 25 اپریل 2019ء کا کابینہ کمیٹی نجکاری کی تشکیل کا نوٹیفکیشن کالعدم قرار دے دیا۔

عدالت نے کابینہ کمیٹی نجکاری میں بطور چیئرمین مشیر خزانہ حفیظ شیخ کی تقرری غیرقانونی قرار دے دی۔

کابینہ کمیٹی میں مشیر تجارت عبدالرزاق داؤد اور مشیر ادارہ جاتی اصلاحات ڈاکٹر عشرت حسین کی شمولیت بھی غیر قانونی قرار دے دی گئی۔

ن لیگ کے ایم این اے رانا ارادت نے محسن شاہنواز رانجھا کے ذریعے درخواست دائر کی تھی جس پر جسٹس عامر فاروق اور جسٹس غلام اعظم قمبرانی پرمشتمل ڈویژن نے مختصر فیصلہ سنایا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

اسی طرح کی مزید پوسٹس

مینو