جرمنی میں 500 کلوگرام بم کو ناکارہ بنانے کیلئے ہزاروں افراد کو گھر خالی کرنا پڑگئے

جرمنی کے شہر فرینکفرٹ میں 75 سال پرانے 500 کلو گرام کے ایک بم کو ناکارہ بنانے کے لیے 13 ہزار شہریوں کو احتیاطاً گھر خالی کرنا پڑگئے۔

خبر ایجنسی کے مطابق جرمنی کے معاشی مرکز فرینکفرٹ میں جمعرات کے روز تعمیراتی مقصد کے لیے کی جانے والی کھدائی کے دوران ایک 500 کلو گرام وزنی بم برآمد ہوا۔

رپورٹ کے مطابق یہ بم برطانوی ساختہ تھا جو کہ دوسری عالمی جنگ کے دوران برطانوی جہازوں نے گرایا تھا لیکن وہ اب تک نہیں پھٹ سکا تھا۔

بم ڈسپوزل اسکواڈ نے آج اتوار کو بم کو وہیں پر ناکارہ بنانے کا فیصلہ کیا اور حفاظتی اقدامات کے تحت اطراف میں 700 میٹر پر موجود آبادی کو محفوظ مقام کی جانب منتقل ہونے کو کہا گیا اور تقریباً 13 ہزار افراد کو فوری گھر چھوڑ کر جانا پڑا۔

رواں سال کے ابتداء میں ورلڈ وار 2 کے 7 بم برلن میں ناکارہ بنائے گئے تھے جبکہ 2017ء میں فرینکفرٹ میں ہی 1 اعشاریہ 4 ٹن وزنی بم برآمد ہوا تھا۔

بم کو ناکارہ بنانے کے بعد مقامی افراد کو دوبارہ گھروں میں جانے کی اجازت دے دی گئی۔

خیال رہے کہ جنگ عظیم دوم کے دوران فرینکفرٹ کو اتحادی افواج کی شدید بمباری کا سامنا کرنا پڑا تھا اور ہزاروں افراد مارے گئے تھے جب کہ جنگ کے خاتمے کے 75 سال بعد بھی فرینکفرٹ اور جرمنی کے دیگر شہروں میں پرانے بم ملتے رہتے ہیں جن کو ناکارہ بنانے کے لیے آبادی کا وقتی انحلاء کرانا پڑتا ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

اسی طرح کی مزید پوسٹس

مینو