وزیراعلیٰ پنجاب کا لاہور کیلیے اربوں روپے کے منصوبوں کا اعلان

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے لاہور کے لیے اسپتال، اوور ہیڈ برج، انڈر پاسز اور الیکٹرک گرین بسوں سمیت اربوں روپے کے کئی منصوبوں کا اعلان کر دیا۔

وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کی زیر صدارت ایل ڈی اے کی گورننگ باڈی کا اجلاس ہوا جس میں وزیراعلی عثمان بزدار نے لاہور کی ترقی کے لیے اربوں روپے کے خصوصی پیکج کا اعلان کیا۔

اس موقع پر عثمان بزدار کا کہنا تھا کہ لاہور کے فیروز روڈ پر 1000 بستروں پر مشتمل جدید اسپتال بنایا جائے گا جس میں سے 400 بستر جنرل، 400 بستر کارڈیالوجی اور 200 بستروں پر بلڈ ڈیزیز کے لیے ہوں گے۔

ان کا کہنا تھا یہ اسپتال ارفع کریم انفارمیشن ٹیکنالوجی ٹاور کے قریب ایل ڈی اے کی اراضی پر بنایا جائے گا، جس کی تعمیر پر 7 ارب روپے لاگت آئے گی۔

عثمان بزدار کا کہنا تھا کہ ریلوے اسٹیشن سے شیرانوالہ گیٹ تک اوورہیڈ برج تعمیر کیا جائے گا، اس منصوبے پر مجموعی طور پر 4 ارب 50 کروڑ روپے لاگت آئے گی، 2 کلومیٹر طویل اوور ہیڈ برج نولکھا تھانے سے شروع ہو گا جب کہ شاہکام چوک پر بھی اوور ہیڈ برج کی تعمیر کا منصوبہ شروع کریں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ لاہور میں بارش کے پانی کو ذخیرہ کرنے کے لیے 10 انڈر گراؤنڈ واٹر ٹینک بنائے جائیں گے، اس منصوبے پر 1 ارب روپے لاگت آئے گی۔

وزیراعلیٰ پنجاب کا کہنا تھا کہ ایل ڈی اے سٹی میں کم آمدن والے طبقے کے لیے 4 ہزار اپارٹمنٹس بنائے جائیں گے، اس منصوبے پر 40 ارب روپے لاگت کا تخمینہ لگایا گیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ مجموعی طور پر 8 ہزار کنال اراضی پر 35 ہزار سے زائد اپارٹمنٹس کی تعمیر کا منصوبہ ہے۔

عثمان بزدار کا کہنا تھا کہ لاہور میں ٹھوکر نیاز بیگ پر جدید بس ٹرمینل بنایا جائے گا، محکمہ ٹرانسپورٹ کو 10 دسمبر تک بس ٹرمینل کا ڈیزائن پیش کرنے کی ہدایت کی گئی ہے جب کہ لاہور سمیت بڑے شہروں میں گرین الیکٹرک بسیں بھی چلائی جائیں گی۔ اس کے علاوہ بند روڈ پر سمن آباد جانے والے چوک پر انڈر پاس بنایا جائے گا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

اسی طرح کی مزید پوسٹس

مینو