غیر قانونی عمارت گرانے کیلیے کارروائی، ایس بی سی اے ٹیم پر حملہ

کراچی کے علاقے ناظم آباد میں غیر قانونی 6 منزلہ رہائشی عمارت گرانے کے لیے سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی (ایس بی سی اے) کی جانب سے کارروائی کی گئی۔

پولیس کا کہنا ہے کہ ناظم آباد نمبر 1 میں علاقہ مکینوں کی درخواست پر ایس بی سی اے کا عملہ غیر قانونی طور پر تعمیر کی گئی عمارت کو توڑنے پہنچا تھا لیکن اس موقع پر عمارت کے رہائشیوں کی جانب سے سخت مزاحمت کا سامنا کرنا پڑا۔

پولیس کے مطابق غیر قانونی طور پر تعمیر بلڈنگ کے مکینوں اور بلڈر کے ساتھیوں نے سرکاری اہلکاروں پرحملہ کیا جس کے نتیجے میں لیڈی سرچر سمیت کچھ اہلکاروں کو معمولی چوٹیں بھی آئیں۔

عمارت کے رہائشیوں کی جانب سے مزاحمت کے بعد انسداد تجاوزات ٹیم واپس لوٹ گئی جب کہ مظاہرین کا کہنا ہے کہ جب عمارت غیر قانونی طور پر بنائی جا رہی تھی تو اس وقت ایس بی سی اے کہاں تھی؟

پولیس کا کہنا ہے کہ ایس بی سی اے کے عملے کو شدید مزاحمت کا سامنا کرنا پڑا، جس کے باعث آپریشن عارضی طور پر روک دیا گیا ہے۔

پولیس حکام کے مطابق عمارت میں عارضی طور پر فیملی کو لا کر بٹھایا گیا ہے، صورتحال کنڑول ہونے کے بعد ایس بی سی اے کی ٹیم عمارت توڑنے کے لیے دوبارہ کارروائی شروع کر دے گی اور حملہ کرنے والوں کے خلاف کارروائی بھی کی جائے گی۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

اسی طرح کی مزید پوسٹس

مینو