لیبارٹری میں تیار کردہ گوشت کے فروخت کی منظوری

سنگاپور دنیا کا پہلا ملک بن گیا ہے جہاں لیبارٹری میں تیار کردہ مرغی کے گوشت کے استعمال کی اجازت دے دی گئی ہے۔

امریکی کمپنی ایٹ جسٹ نے سنگاپور کے فوڈ ریگولیٹرز کی اجازت حاصل کرلی ہے جس کے تحت لیب میں تیار کردہ چکن فروخت کیا جائے گا۔

ماہرین کے خیال میں اس فیصلے سے دنیا کے مختلف مماالک میں لیبارٹری میں تیار کردہ گوشت کی فروخت کا راستہ کھل جائے گا۔

لیبارٹری میں تیار کردہ گوشت زندہ جانوروں کو بائیو ریکٹر فیڈ استعمال کرانے سے بننے والے خلیات کی مدد سے تیار کیا جاتا ہے۔

کمپنیوں کا دعویٰ ہے کہ اس گوشت کا ذائقہ اور ساخت میں کوئی فرق نہیں ہوگا بلکہ صنعتی زراعت سے مرتب موسمیاتی اثرات کو کم کیا جاسکے گا۔

دنیا بھر میں 60 کمپنیاں اس طرح کے گوشت کی تیاری پر کام کررہی ہیں اور انہیں توقع ہے کہ 2032ء تک اس مارکیٹ کی قدر کروڑوں ڈالرز میں ہوگی۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

اسی طرح کی مزید پوسٹس

مینو