مودی نے آر ایس ایس کا انتہا پسند نظریہ سرحد پار تک پھیلا دیا

بھارت میں نریندر مودی کو اقتدار ملنے سے اب تک ہندوتوا اور سیفران دہشت گردی انتہاؤں پر پہنچ گئی۔

مودی نے آر ایس ایس کے انتہا پسند نظریے اور تشدد کی پالیسی کو سرحد پار تک پھیلا دیا ہے، رواں برس بھارت نے 2820 مرتبہ جنگ بندی کی خلاف ورزی کی، فائرنگ سے 27 بے گناہ شہری شہید اور 245 شدید زخمی ہوئے۔

بزدل بھارتی فوج ایل او سی پر ہمیشہ سویلین کو ٹارگٹ کرتی ہے اور یہ سلسلہ کئی برسوں سے جاری ہے، بھارتی فوج نے2016ء میں 382 مرتبہ، 2017ء میں 1881 مرتبہ، 2018ء میں 3038 مرتبہ 2019ء میں 3351 مرتبہ ایل او سی کی خلاف ورزی کی، 2015ء میں 39 شہری شہید، 152 زخمی، 2016ء میں 46 سویلین شہید، 150 زخمی ہوئے، 2017ء میں بھارتی فائرنگ سے 53 افراد شہید، 256 زخمی ہوئے،. 2018ء میں بھارتی روش 58 جانیں لے گئی، 319 زخمی بھی ہوئے۔

23 ستمبر کو پاکستان میں تعینات 24 سفیروں کو لائن آف کنٹرول کا دورہ کرایا گیا اور انہوں نے اپنی آنکھوں سے بھارتی جارحیت اور املاک کو نقصان کا جائزہ لیا۔

سفارتکاروں نے اپنے ٹویٹ کے زریعے لائن آف کنٹرول دورہ اجاگر کیا پاکستان کی طرف سے ہمیشہ سفارتکاروں، اقوام متحدہ فوجی مبصرین کو مکمل رسائی و سہولت دی، 26 فروری کو بھارتی طیاروں کی ایل او سی کراس کرنے اور بھارتی جہاز کی تباہی پر ملکی اور غیر ملکی صحافیوں کو موقع کا دورہ کرایا گیا، دورے کے موقع پر ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل بابر افتخار کا کہنا سچ ثابت ہوا، ہمارے پاس چھپانے کیلیے کچھ نہیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

اسی طرح کی مزید پوسٹس

مینو