سعودی عسکری اتحاد نے بحیرہ احمر میں آئل ٹینکر پر حملہ ناکام بنادیا

یمن جنگ میں شریک سعودی عسکری اتحاد نے بحیرہ احمر میں دہشت گردی کی کارروائی ناکام بناتے ہوئے بارود سے بھری حملہ آور کشتی کو تباہ کردیا۔

عرب میڈیا کے مطابق سعودی عسکری اتحاد کے ترجمان کاکہنا ہےکہ یمنی سمندری حدود سے آنے والی لانچ میں دھماکا خیز مواد لدا ہوا تھا اور یہ کشتی بحیرہ احمر میں دہشتگردی کی کارروائی کرنا چاہتی تھی۔

ترجمان سعودی عسکری اتحاد کا کہنا ہے کہ بروقت کارروائی کرکے کشتی کو تباہ کردیا گیا ہے جب کہ کشتی پر موجود بارودی مواد پھٹنے سے قریب سے گزرنے والے ایک تجارتی بحری جہاز کو نقصان پہنچا ہے۔

سعودی عسکری اتحاد کا کہنا ہے کہ حوثی ملیشیا بحیرہ احمر میں سمندری راہداری کے لیے خطرہ بن چکی ہے جوکہ بین الاقوامی تجارت کے لیے نقصان دہ ہوسکتا ہے۔

دوسری جانب برطانوی میری ٹائم سیکیورٹی کمپنی نے خبر ایجنسی کو بتایا ہے کہ ایک یونانی جہاز راں کمپنی کے آئل ٹینکر کو سعودی بندرگاہ کے قریب دھماکا خیز مواد سے نقصان پہنچا ہے۔

خبر ایجنسی کے مطابق واقعے میں آئل ٹینکر کا سطح سمندر کے قریب موجود حصہ متاثر ہوا اور اسے معمولی نقصان پہنچا۔

عرب میڈیا کے مطابق یونانی جہاز راں کمپنی کا کہنا ہے کہ جہاز خطرے سے باہر ہے اور اس سے کسی قسم کی سمندری آلودگی کا خدشہ نہیں ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

اسی طرح کی مزید پوسٹس

مینو