بلاول اور وفاقی وزراء کے انتخابی مہم میں حصہ لینے پر پابندی عائد

سپریم اپیلیٹ کورٹ گلگت بلتستان نے بلاول بھٹو اور وفاقی وزراء سمیت ارکان اسمبلی کو جی بی الیکشن کی انتخابی مہم میں حصہ لینے پر پابندی عائد کر دی۔

سپریم اپیلیٹ کورٹ جی بی کے ترجمان چوہدری عبدالقیوم کی جانب سے جاری پریس ریلیز کے مطابق عدالت عظمیٰ گلگت بلتستان کے چیف جسٹس سید ارشد حسین شاہ اور سینئر جج جسٹس وزیر شکیل احمد پر مشتمل ڈویژن بنچ نے پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو اور وفاقی وزراء سمیت ارکان اسمبلی کو جی بی الیکشن کی انتخابی مہم میں حصہ لینے سے روکنے سے متعلق چیف کورٹ جی بی کے 6 نومبر 2020ء کے فیصلے کے خلاف پی پی پی کی اپیل کی سماعت کی۔

اپیلیٹ کورٹ نے جمعرات کی رات 8 بجکر 45 منٹ پر فیصلہ صادر کرتے ہوئے بلاول بھٹو اور وفاقی وزراء سمیت تمام ارکان اسمبلی پر جی بی الیکشن کی انتخابی مہم میں حصہ پر پابندی سے متعلق چیف کورٹ جی بی کے فیصلے کو بحال اور برقرار رکھا جب کہ سپریم اپیلیٹ کورٹ نے چیف کورٹ کی جانب سے بلاول بھٹو اور جی بی الیکشن میں حصہ لینے والے دیگر ارکان اسمبلی کو 3 دن کے اندر جی بی کو چھوڑنے سے متعلق چیف کورٹ کے فیصلے کو کالعدم قرار دے دیا۔

خیال رہے کہ 15 نومبر کو گلگت بلتستان کی قانون ساز اسمبلی کے لیے 24 میں سے 23 نشستوں پر انتخابات ہونے جا رہے ہیں جس میں بلاول بھٹو پیپلز پارٹی جب کہ علی امین گنڈاپور، مراد سیعد اور زلفی بخاری پاکستان تحریک انصاف کی انتخابی مہم کو لیڈ کر رہے ہیں۔

مسلم لیگ ن کی انتخابی مہم کی قیادت مریم نواز کر رہی ہیں لیکن ان کے ساتھ ن لیگ کے اراکین اسمبلی بھی موجود ہیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو