پیرس میں بم کی اطلاع پر ایفل ٹاور اور اطراف کے علاقے خالی کرالیےگئے

فرانس کے دارالحکومت پیرس میں بم کی اطلاع پر ایفل ٹاور اور یادگار ‘آرک ڈی ٹرومفے’ کے علاقے خالی کرالیے گئے۔

برطانوی میڈیا کے مطابق بم کی اطلاع ملنے کے بعد پولیس نے پیرس کے سیاحتی علاقےکوگھیرے میں لےکر خالی کرالیا۔

خبر ایجنسی کے مطابق پولیس کو ایفل ٹاور کے قریب سے اسلحہ اور گولیوں سے بھرا ایک بیگ بھی ملا ہے، سوشل میڈیا پر سامنے آنے والی تصاویر میں ایک نیلے رنگ کے بیگ میں گولیاں اور مختلف قسم کا اسلحہ موجود ہے۔

پولیس کا کہنا ہےکہ علاقے کو کلیئر کر لیا گیا ہے اور پر ایفل ٹاور اور یادگار آرک ڈی ٹرومفے کے علاقے دوبارہ کھول دیے گئے ہیں اور اب ٹریفک معمول پر آگیا ہے۔

خیال رہے کہ کلاس میں گستاخانہ خاکے دکھانے پر ایک 18 سالہ مسلم نوجوان کی جانب سے فرانسیسی استاد کا سر قلم کیے جانے کے بعد سے فرانس میں ہائی الرٹ ہے۔

سوشل میڈیا پر سامنے آنے والی تصاویر میں ایک نیلے رنگ کے بیگ میں گولیاں اور مختلف قسم کا اسلحہ موجود ہے.

فرانسیسی حکومت کی جانب سے دنیا بھر میں اپنے شہریوں کو غیر ضروری سفر سے اجتناب کرنے کی ہدایات بھی جاری کی گئی ہیں۔

فرانسیسی صدر ایمانوئل میکرون کی جانب سے گستاخانہ خاکوں کی اشاعت کی حمایت کے بعد دنیا بھر میں فرانس کے خلاف احتجاج کا سلسلہ شروع ہوگیا ہے اور مسلم ممالک میں فرانسیسی اشیاء کے بائیکاٹ کی مہم بھی چل رہی ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو