پی آئی اے 5 برس لگاتار خسارے کے بعد منافع میں آگئی

قومی ایئر لائن پی آئی اے نے پانچ برسوں کے مسلسل خسارہ کے بعد 2019ء میں7 ارب روپے سے زائد منافع کمایا۔

2018ء میں پی آئی اے 19 ارب 80 کروڑ روپے کے نقصان میں تھی، 2017ء میں پی آئی اے کا خسارہ 17 ارب جبکہ 2016ء میں 14 ارب سے زائد تھا، گزشتہ سال پی آئی اے کے ریونیو میں 42 اعشاریہ 5 فیصد اضافہ ہوا، جو 2019ء میں147 ارب روپے تک جا پہنچا، 2018ء میں پی آئی اے کا ریونیو 103 ارب جبکہ 2017ء میں 90 ارب روپے تھا۔

2018ء میں پی آئی اے کا آپریٹنگ نقصان 32 ارب روپے تھا جبکہ 2019ء میں آپریشنل نقصان 7 اعشاریہ 7 ارب روپے رہا.

رپورٹ کے مطابق گزشتہ سال کے مقابلے میں پی آئی اے کے آپریشنل نقصان میں 75 فیصد بہتری آئی اور سیٹ فیکٹر میں 4 فیصد اضافہ ہوا۔

2018ء میں پی آئی اے کے فیول اینڈ آئل اخراجات 43 ارب روپے تھے، جو 2019ء میں بڑھ کر50ارب تک جا پہنچے، 2016 میں پی آئی اے کا فیول اینڈ آئل اخراجات صرف 27 ارب روپے تھے، جہازوں کی دستیابی اور اچھی مینٹینینس، روٹ اور کارگو سہولیات میں بہتری کی وجہ سے بھی نیشنل فلیگ کیریئر کی کارکردگی میں بہتری آئی ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو