مصر میں اخوان المسلمین کے 13 کارکنوں کو پھانسی دے دی گئی

مصری حکومت نے اخوان المسلمین سے تعلق رکھنے والے 13 سیاسی کارکنوں کو پھانسی دے دی۔

ترک اخبار کے مطابق مصر کی عبدالفتح السیسی حکومت نے کئی سال سے قید 13 سیاسی کارکنوں کو پھانسی دی ہے، پھانسی پانے والے تمام افراد اخوان المسلمین کے کارکن اور ہمدرد تھے۔

مصری ٹی وی نے بھی اخوان المسلمین کے 13 کارکنوں کی پھانسی کی سزا پر عمل درآمد کرنے کی تصدیق کی ہے۔

پھانسی پانے والے ان افراد پر حکومت کے خلاف بغاوت اور پولیس اہلکاروں پر حملے میں ملوث ہونے کے الزامات تھے۔

اخوان المسلمین نے پھانسیوں کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایسے وقت جب مصری حکومت کے خلاف مظاہرے ہورہے ہیں، حکومت سیاسی کارکنوں کو پھانسی دے کر نوجوانوں کو خوفزدہ کرنا چاہتی ہے۔

دوسری جانب انسانی حقوق کی تنظیموں نے بھی پھانسی کی سزا اور عدالتی کارروائی پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔

خیال رہے کہ 2013ء میں مصری فوج نے اخوان المسلمین سے تعلق رکھنے والے ملک کے پہلے منتخب صدر محمد مرسی کا تختہ الٹ کر اقتدار پر قبضہ کرلیا تھا جس کے بعد سے اخوان المسلمین کے متعدد رہنماؤں پر مقدمات قائم کیے جاچکے ہیں اور سینکڑوں کو قید اور سزائیں دی جاچکی ہیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو