ٹرمپ کو دو مرتبہ خون میں آکسیجن کی کمی کا مسئلہ ہوا ہے، میڈیکل ٹیم

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی طبیعت میں مسلسل بہتری آرہی ہے، تاہم ٹرمپ کو دو مرتبہ خون میں آکسیجن کی کمی کا مسئلہ ہوا ہے۔

وائٹ ہاؤس کی میڈیکل ٹیم نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی طبیعت سے متعلق بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ آکسیجن کی کمی پر ٹرمپ کو سپلیمنٹل آکسیجن تجویز کی گئی۔

میڈیکل ٹیم کا کہنا ہے کہ صدر ٹرمپ کو جمعہ کی صبح سے اب تک بخار نہیں ہوا ہے، ٹرمپ کو ریمڈیسیور کی دوسری خوراک مکمل کر دی گئی ہے۔

وائٹ ہائوس کا کہنا ہے کہ ٹرمپ کا جگر اور گردے کا نظام بالکل ٹھیک کام کر رہا ہے، صدر ٹرمپ پیر کی صبح تک اسپتال سے واپس آسکتے ہیں۔

کورونا وائرس میں مبتلا امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی طبیعت سے متعلق وائٹ ہاؤس کا کہنا ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ کے لیے آئندہ چوبیس گھنٹے انتہائی اہم ہوں گے۔

وائٹ ہاؤس کے چیف آف اسٹاف مارک میڈوز کے مطابق صدر پچھلے 24 گھنٹوں کے دوران انتہائی تشویشناک صورتحال سے گزرے تاہم یہ واضح نہیں کہ صدر کی طبیعت مکمل بحال ہونے میں کتنا وقت لگے گا۔

دوسری جانب امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اسپتال سے ویڈیو بیان جاری کیا ہے جس میں ان کا کہنا ہے کہ وہ پہلے سے بہتر محسوس کر رہے ہیں تاہم کورونا سے ریکوری کے لیے آئندہ چند روز اصل امتحان ہے۔

ویڈیو بیان میں صدر ٹرمپ نے امید ظاہر کی کہ وہ جلد انتخابی مہم میں واپس آئیں گے۔

ڈاکٹروں کے مطابق ڈونلڈ ٹرمپ کو ہفتہ کو بخار نہیں تھا، انہیں ریمڈیسویر دوا بھی دی گئی ہے۔

امریکی میڈیا کے مطابق صدر ٹرمپ کو جمعہ کو اسپتال منتقل کرنے سے پہلے آکسیجن لگانا پڑی تھی۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو