افغانستان میں سڑک کنارے نصب بم دھماکے میں5 بچوں سمیت 14 افراد جاں بحق

افغانستان کے وسطی صوبے دائکندی میں سڑک کنارے نصب بم دھماکے میں 14 شہری جاں بحق اور 3 بچے زخمی ہوگئے۔

افغان وزارت داخلہ کے ترجمان کے مطابق دائکندی کے ضلع کجران میں بم دھماکے میں مسافروں کی بس کو نشانہ بنایا گیا جس میں 7 خواتین، 5 بچے اور 2 مرد جاں بحق ہوئے۔

افغان وزارت داخلہ نے دھماکے کا الزام طالبان پر عائد کیا ہے تاہم طالبان نے دھماکے پر ابھی کوئی ردعمل نہیں دیا ہے۔

خیال رہے کہ قطر میں افغان حکومت اور طالبان کے درمیان بین الافغان مذاکرات کے آغاز کے بعد سے افغانستان میں تشدد کے واقعات میں اضافہ ہوگیا ہے۔

گذشتہ دنوں افغان صدر اشرف غنی نے اقوامی متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس سے خطاب میں کہا تھا کہ افغان عوام کی واضح اور فوری ضرورت جنگ بندی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ تشدد کو فوری طور پر روکنے سے امن کی بحالی کے عمل میں تیزی آسکے گی۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو