نامناسب بیان پر خاتون ایم پی اے کا سی سی پی او لاہور کو چوڑیوں اور دوپٹے کا تحفہ

پیپلز پارٹی کی رکن خیبر پختونخوا اسمبلی نگہت اورکزئی نے موٹر وے گینگ ریپ واقعے سے متعلق نامناسب بیان پر کیپٹل سٹی پولیس آفیسر (سی سی پی او) لاہور عمر شیخ کو چوڑیوں اور دوپٹے کا تحفہ بھیج دیا۔

نگہت اورکزئی نے سی سی پی اور لاہور عمر شیخ کے لیے چوڑیوں اور دوپٹے کا تحفہ بھیجنے کا اعلان کرتے ہوئے سوال کیا ہے کہ اگر ان کی اپنی بیٹی زیادتی کا نشانہ بنتی تب بھی وہ یہی بات کرتے؟

خیال رہے کہ گذشتہ دنوں موٹروے پر خاتون کو بچوں کے سامنے زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد سے پورے ملک میں غم و غصہ پایا جاتا ہے تاہم ایسے موقع پر سی سی پی او لاہور عمر شیخ نے ایک بیان میں کہا تھا کہ خاتون کو موٹر وے پر چڑھنے سے پہلے پیٹرول چیک کرنا چاہیے تھا اور رات کے وقت بغیر کسی مرد کے سفر نہیں کرنا چاہیے تھا۔

سی سی پی او کے اس بیان پر شدید تنقید کی جا رہی ہے اور سینیٹ کی انسانی حقوق کمیٹی نے انہیں طلب کیا ہے جب کہ چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ نے بھی سی سی پی او کے بیان پر حکومت سے رپورٹ طلب کرلی ہے۔

دوسری جانب اب سی سی پی او لاہور عمر شیخ نے اپنے متنازع بیان پر معافی مانگ لی ہے۔

عمر شیخ نے گورنر پنجاب چوہدری سرور کے ساتھ ملاقات میں کہا کہ میرے بیان سے کسی کی دل آزاری ہوئی ہے تو معافی مانگتا ہوں، میرا کوئی بھی غلط مطلب یا تاثر نہیں تھا، میں اپنی بہن جس سے زیادتی ہوئی سمیت تمام طبقات سے معافی مانگتا ہوں۔

واضح رہےکہ اگرچہ خیبر پختونخوا اسمبلی کی خاتون ممبر نگہت اورکزئی نے چوڑیوں اور دوپٹے کو کمزوری کی علامت کے طور پر استعمال کرتے ہوئے عمر شیخ کو بھیجے ہیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو