پاکستان کے سب سے بڑے شہر کراچی سمیت سندھ کے 20 اضلاع آفت زدہ قرار

طوفانی بارشوں کے بعد پاکستان کے سب سے بڑے شہر کراچی سمیت سندھ کے 20 اضلاع کو آفت زدہ قرار دے دیا گیا۔

ریکارڈ توڑ بارشوں کا اسپیل چلا گیا لیکن مسائل کا طوفان چھوڑ گیا، پاکستان کی وال اسٹریٹ آئی آئی چندریگر روڈ سمیت کئی مرکزی شاہراہیں دو روز تالاب بنی رہیں، شدید متاثرہ علاقوں میں بپھرے ریلوں سے بے حال لوگوں کو کشتیوں سے محفوظ مقامات پر منتقل کیا جاتا رہا، کچھ مقامات سے پریشان حال شہری تنگ آکر نقل مکانی پر مجبور ہوگئے۔

شہر کراچی کے ساتوں انڈر پاسز پانی سے بھر کر سوئمنگ پول بن گئے،کئی سڑکوں پر گڑھے پڑگئے، گلیاں کیچڑ سے بھر گئیں، کھڑے پانی سے تعفن اٹھنے لگا، شہریوں کا جینا محال ہونے لگا، بجلی کے بعد کئی علاقوں میں پانی بھی ساتھ چھوڑگیا۔

شہر میں موبائل فون کے ساتھ انٹرنیٹ کے سگنلز بھی سوتے جاگتے رہے، کچھ قبرستانوں کی حالت بھی خراب، قبریں دھنس گئیں، کتبے گرگئے۔

ابھی شہری حالیہ بارشوں سے ہونے والے نقصان سے ابھر ہی رہے ہیں کہ محکمہ موسمیات نے مون سون کے چھٹے اسپیل کی کراچی آمد کی خبر سنادی۔

حکومت سندھ نے صوبے کے چار ڈویژنز کے 20 اضلاع کو آفت زدہ قرار دے دیا ہے، ریلیف کمشنر سندھ نے نوٹیفکیشن جاری کردیا ہے جس کے مطابق کراچی کے تمام 6 اضلاع آفت زدہ قرار دیے گئے ہیں۔

ترجمان سندھ حکومت مرتضیٰ وہاب نے کہا ہے کہ کراچی کے تمام 6 اضلاع کے علاوہ بدین، ٹھٹھہ، سجاول، جامشورو، حیدرآباد، ٹنڈو محمد خان، ٹنڈو الہ یار، مٹیاری، دادو، میرپورخاص، عمرکوٹ، تھرپارکر، بینظیرآباد اورسانگھڑ کے اضلاع کو بھی آفت زدہ قرار دیا گیا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ آفت زدہ قرار دیے گئے اضلاع کے ڈپٹی کمشنرز کو نقصانات کا تخمینہ لگانے کی ہدایت کردی گئی ہے۔

محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ خلیج بنگال میں بننے والا سسٹم سمندر سے نمی لے کر اندرون سندھ پر اثر انداز ہوگیا ہے۔

ترجمان محکمہ موسمیات کے مطابق اندرون سندھ میں یہ سسٹم بارشیں برسا رہا ہے،کل شام مون سون کا چھٹا اسپیل کراچی میں داخل ہوگا۔

ترجمان محکمہ موسمیات کے مطابق مون سون کا چھٹا اسپیل 24گھنٹے کراچی میں رہے گا اور اس دوران کہیں معتدل اورکہیں تیز بارش ہوگی۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے بتایا تھا کہ حالیہ مون سون سیزن میں اب تک صوبے میں 80 افراد جاں بحق ہوچکے ہیں جن میں سے 47 کا تعلق کراچی سے ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو