یورو جسٹ کی بین الاقوامی مجرم گروپوں کے خلاف کامیاب کاروائیاں

یورپین یونین کی مجرمانہ سرگرمیوں کے خلاف تعاون کی ایجینسی یورو جسٹ کی بین الاقوامی مجرم گروپوں کے خلاف کامیاب کاروائیاں جاری ہیں۔

ایجینسی نے دو روز کے دوران دو بڑی کاروائیوں میں فلموں اور ٹی وی پروگراموں کا جعلی آن لائن سسٹم چلانے اور منشیات کا دھندہ کرنے والے دو منظم گروہوں کو پکڑا ہے۔

فلموں اور دیگر نشریاتی مواد کو ہیک کرکے اپنے آن لائن سسٹم پر چلانے والے گروہ کو امریکا سمیت 18 دیگر ممالک کے تعاون سے پکڑا گیا ہے۔

اس سلسلے میں شمالی امریکا، یورپ اور ایشیا میں پھیلے ہوئے 60 سرورز کو بند کر کے اسے چلانے والے کلیدی افراد کو بھی گرفتار کیا گیا ہے۔

ایجینسی کے مطابق پکڑے جانے والا ’سپارکس گروپ‘ نامی یہ گروہ ابتک فلم اور دیگر نشریاتی مواد کو جعل سازی کے ذریعے حاصل کر کے انڈسٹری کو سالانہ ہزاروں ملین ڈالر کا نقصان پہنچا چکا ہے۔

اس گروہ نے کوریا، جمہوریہ چیک، ڈنمارک، فرانس، جرمنی، لٹویا، رومانیہ، پولینڈ، پرتگال، اسپین، سویڈن، سوئٹزرلینڈ، نیدر لینڈز، ناروے اور برطانیہ میں اپنے سرور لگا رکھے تھے، جنہیں ان ملکوں کے اداروں کی مدد سے پکڑا گیا، جبکہ اس گروہ کے دو اہم کارندوں کو یونان اور امریکا سے گرفتار کر لیا گیا ہے۔

ہونے والی دوسری کارروائی میں ایجینسی اور یورو پول نے لتھوینیا برطانیہ اور آئیر لینڈ میں منشیات فروشوں کے ایک گروہ کے 18 افراد کو گرفتار کر کے ان سے 7 لاکھ یورو مالیت کی منشیات ضبط کرلیں۔

ایجینسی کے مطابق مذکورہ گروہ منی لانڈرنگ اور ہیومن ٹریفکنگ کے علاوہ 65 چھوٹے کارندوں اور سپلائرز کے ذریعے منشیات کی فروخت کا دھندہ چلا رہا تھا۔

ایجینسی کے مطابق لتھوینیا سے تعلق رکھنے والا اس گروپ کا سربراہ دو ساتھیوں کی مدد سے اپنے ہم وطنوں کو پہلے جعلی طریقے سے برطانیہ اور آئیر لینڈ پہنچاتا اور پھر ان کے ذریعے منشیات اسٹریٹ ڈیلرز تک پہنچاتا جو اسے آگے فروخت کرتے۔

پولیس کے مطابق ایسے افراد کی تعداد 20 کے قریب ہے۔

اپنی ویب سائٹ پر جاری اعلامیے کے ذریعے یورو جسٹ نے ان کاروائیوں اور اس میں گرفتاریوں کو باہمی تعاون کی ایک بہترین مثال قرار دیا ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

اسی طرح کی مزید پوسٹس

مینو