بحرین نے اسرائیل کو تسلیم کرنے کے امریکی مطالبے کو مسترد کردیا

منامہ: بحرین کے بادشاہ حمد بن عيسى بن سلمان آل خليفہ نے مائیک پومپیو سے ملاقات کے دوران اسرائیل کو تسلیم کرنے کے مطالبے کو یکسر مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ عرب ممالک کے خود مختار فلسطین کے مطالبے کے ساتھ کھڑے ہیں۔

بحرین نیوز ایجنسی کے مطابق متحدہ عرب امارات کی جانب سے اسرائیل کے ساتھ سفارتی تعلقات کی بحالی کے اعلان کے بعد امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو اسرائیل پہنچے جہاں ایک دن قیام کے بعد وہ مشرق وسطیٰ کے عرب ممالک کا دورے پر آج بحرین پہنچے ہیں۔

بحرین کے بادشاہ حمد بن عیسیٰ کے ساتھ ملاقات کے دوران مائیک پومپیو نے اسرائیل کو تسلیم کرنے سے متعلق امریکی صدر کا پیغام پہنچایا جسے مسترد کرتے ہوئے بحرین کے صدر نے کہا کہ وہ دیگر عرب ممالک کے اسرائیل کے انخلا اور فلسطین کو خود مختار ریاست بنانے کے عزم کے ساتھ کھڑے ہیں۔

بادشاہ حمد بن عیسیٰ نے امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو کے عرب ممالک کی طرف سے اسرائیل کے ساتھ تعلقات کو معمول پر لانے کے دباؤ کو واضح طور پر مسترد کرتے ہوئے کہا کہ فلسطین کو 1967ء سے پہلے کی حیثیت میں بحال کرنا ہوگا۔

واضح رہے کہ امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو اسرائیل کے لیے عرب ممالک کی حمایت حاصل کرنے کے لیے مشرق وسطی کے دورے پر ہیں جس کا مقصد متحدہ عرب امارات کی طرح دیگر عرب ممالک کے بھی اسرائیل سے تعلقات استوار کرانا ہیں۔ گزشتہ روز انہوں نے اسرائیل کا دورہ بھی کیا تھا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو