امریکا ؛ سیاہ فام شخص کی پولیس فائرنگ سے ہلاکت کیخلاف مظاہرے میں 2 افراد ہلاک

امریکا میں سیاہ فام جیکب کی پولیس کی فائرنگ سے ہلاکت کیخلاف احتجاجی مظاہروں کے دوران مزید دو شخص ہلاک اور ایک زخمی ہوگیا۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکی ریاست وسکونسن میں سیاہ فام شخص جیکب کی پولیس فائرنگ سے ہلاکت پر احتجاجی مظاہرے تیسرے روز پُرتشدد ہوگئے اور مختلف واقعات میں 2 افراد ہلاک اور ایک شدید زخمی ہوگیا۔

مظاہرین کا دعویٰ ہے کہ یہ افراد پولیس کی فائرنگ کا نشانہ بنے، پولیس نے براہ راست مظاہرین کو گولیوں کا نشانہ بنایا ہے جب کہ فائرنگ سے ہونے والی دھکم پیل میں بھی کئی افراد زخمی ہوئے۔

پولیس نے اس الزام کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ کرفیو کی خلاف ورزی کرنے والے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے آنسو گیس کی شیلنگ کی اور ربر کی گولیاں استعمال کیں، مظاہرین اپنی ہی گولیوں کا نشانہ بنے۔

سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ویڈیوز میں دیکھا جا سکتا ہے کہ مظاہرین شدید خوف کے عالم میں اِدھر اُدھر بھاگ رہے ہیں اور گولیوں کی ترتڑاہٹ کی آوازیں آرہی ہیں۔ خواتین کے رونے اور بچوں کی آوازیں بھی سنائی دے رہی ہیں۔

واضح رہے کہ تین روز قبل پولیس نے سیاہ فام شہری جیکب پر اُس کے 3 بچوں کے سامنے فائرنگ کی جو گاڑی میں بیٹھے ہوئے تھے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

اسی طرح کی مزید پوسٹس

مینو