بینکوں، مالیاتی اداروں کیلیے کھاتے دار کی مصدقہ معلومات کی فراہمی لازمی

ایف بی آر نے بینکوں اورمالیاتی اداروں کیلیے کھاتے دارکی تصدیق شدہ معلومات کی فراہمی لازمی قرار دیدی ہے۔

انکم ٹیکس قوانین 2002ء میں ترامیم کا نوٹیفکیشن جاری کردیا گیا، اس کے تحت ماہانہ1 کروڑ روپے یا زیادہ جمع کرانے والوں، 10لاکھ روپے یا زیادہ نکلوانے کی معلومات دینا ہونگی، ماہانہ 2 لاکھ روپے یا زیادہ کریڈٹ کارڈ بل جمع کرانے والوں کا فارم بھرنا ہوگا۔ سالانہ ڈیبٹ اسٹیٹمنٹ پر منافع کی معلومات سے متعلق مبنی فارم بھی پُر کرنا ہوگا۔

نئی ترامیم کے تحت اکاؤنٹ نمبر، شناختی کارڈ، پاسپورٹ، این ٹی این نمبر کی فراہمی لازمی قرار دی گئی ہے۔ ایف بی آر کو کھاتہ دار کا پیشہ، رہائشی پتہ اور ٹیلی فون نمبر دینا ہوگا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو