وزرا کو 2 سالہ کارکردگی پر پریس کانفرنس کے بجائے منہ چھپانا چاہیے، مفتاح اسماعیل

مسلم لیگ ن کے رہنما مفتاح اسماعیل کا کہنا ہے کہ وفاقی وزرا کو 2 سالہ کارکردگی سے متعلق پریس کانفرنس کے بجائے منہ چھپانا چاہیے۔

کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے مفتاح اسماعیل کا کہنا تھا کہ مسلم لیگ ن نے جب حکومت چھوڑی تو قومی آمدنی بڑھ رہی تھی، تحریک انصاف نے پہلے ہی سال قومی انکم کو کم کیا اور اس سال تو منفی کردیا۔

مفتاح اسماعیل کا کہنا تھا کہ ان کی ناکامیوں سے ہماری کامیابیاں نظر آرہی ہیں، مہنگائی 3.9 پر چھوڑ کر گئے تھے اب 12 تک چلی گئی ہے، آٹا ہماری حکومت میں 35 روپے کلو تھا آج 70 روپے سے زیادہ کا مل رہا ہے، حکومت ہر الزام مافیا کے اوپر ڈال دیتی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ہم نے 5 سال میں 10 ہزار ارب روپے کا قرض لیا جب کہ تحریک انصاف نے 2 سال میں 11 ہزار ارب روپے کا قرضہ لے لیا ہے، 60 سے 80 لاکھ لوگ غربت کی لکیر سے نیچے چلے گئے ہیں، ملک کی حالت خراب ہے اور آپ کہہ رہے ہیں کہ عثمان بزدار ابھی سیکھ رہے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ پورے پاکستان میں لوڈشیڈنگ شروع کردی گئی جب کہ حکومت نے بجلی کی قیمت میٕں کوئی کمی نہیں کی، پاکستان میں بجلی اور گیس دنیا کے کسی بھی ملک سے زیادہ مہنگی ہے، ستمبر میں بجلی کے نرخ بھی بڑھ جائیں گے۔

میڈیا پر ڈھول بجانے سےکارکردگی مثبت نہیں ہوگی: مریم اورنگزیب

دوسری جانب ترجمان ن لیگ مریم اورنگزیب نے کہا کہ عمران صاحب میڈیا پرڈھول بجانے سے 2 سال کی منفی کارکردگی مثبت نہیں ہوجائے گی۔

وفاقی وزراء کی پریس کانفرنس پر ردعمل میں مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ دو سال میں ہر شعبہ کی تباہی ہوئی ہے، دوسال میں 5.8 فیصد ترقی کی شرح 0.4 فیصد کیوں ہوئی؟ دو دن میں جواب نہیں آیا، دو سال میں 13000 ارب قرض لے کر بھی نئی ایک اینٹ نہیں لگائی، اس کا جواب بھی نہیں ملا۔

ان کا کہنا تھا کہ دو سال میں 80 لاکھ لوگ غربت کی لکیر سے نیچے کیوں چلے گئے؟ 20 لاکھ لوگ بے روزگار ہوگئے، مہنگائی تین فیصد سے 13فیصد پر چلی گئی لیکن دو دن میں ان باتوں کا جواب نہیں آیا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

اسی طرح کی مزید پوسٹس

مینو