آرمی چیف کی سعودی نائب وزیر دفاع سے ملاقات

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سعودی عرب کے اہم سرکاری دورے پر ہیں جہاں ان کی سعودیہ کے حکومتی اور عسکری حکام سے ملاقاتیں جاری ہیں۔

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے سعودی نائب وزیر دفاع خالد بن سلمان سے ملاقات کی جس میں انٹرسروسز انٹیلی جنس (آئی ایس آئی) کے سربراہ لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید بھی موجود تھے۔

ملاقات میں دفاعی تعاون، خطے کی سلامتی اور باہمی دلچسپی کے امور پر گفتگو کی گئی۔

خیال ہے کہ گزشتہ روز آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے سعودی چیف آف جنرل اسٹاف لیفٹننٹ جنرل فیاض بن حامد اور سعودی جوائنٹ فورسز کے کمانڈر لیفٹننٹ جنرل فہد سے بھی ملاقات کی تھی۔

واضح رہے کہ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کا سعودی عرب کا حالیہ دورہ انتہائی اہم ہے۔

گزشتہ دنوں ایک انٹرویو میں شاہ محمود قریشی نے کہا تھا کہ اگر کشمیر پر او آئی سی وزرائے خارجہ کونسل کا اجلاس نہ بلایا گیا تو پاکستان مظلوم کشمیریوں کی مدد پر آمادہ دوست ممالک کا اجلاس بلانے پر مجبور ہو جائے گا۔

وزیر خارجہ کے بیان پر اپوزیشن جماعتوں نے شدید تنقید کی تھی اور اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے ردعمل میں کہا تھا کہ سعودی عرب سے متعلق وزیر خارجہ کا بیان غیر ذمہ دارانہ ہے لہٰذا معذرت کی جائے۔

دوسری جانب سعودی حکومت نے اب پاکستان کو دیے گئے تین ارب ڈالر میں سے ایک ارب ڈالر واپس لے لیے ہیں جس کی تصدیق وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے بھی کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ’کورونا وائرس کی وجہ سے سعودیہ کی معیشت پر کافی دباؤ آیا ہے، تیل کی قیمتیں جس طرح گری ہیں یہ ایک تاریخی حقیقت ہے، اس کا اثر ان کی معیشت پر پڑا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

اسی طرح کی مزید پوسٹس

مینو