کل سوچتے تھے سری نگر کیسے لینا ہے، آج سوچتے ہیں مظفرآباد کیسے بچانا ہے: فضل الرحمان

جمعیت علمائے اسلام (جے یو آئی) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کا کہنا ہے کہ ملک کو بچانا ہے تو ان حکمرانوں کو نکالنا ہوگا۔

پشاور میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ ہم آمرانہ رویوں سے پہلے بھی لڑتے تھے اب بھی لڑیں گے، ہمیں آپ کے حربوں سے کوئی خوف نہیں۔

انہوں نے کہا کہ ذاتی اور پارٹی مفادات سے بالاتر ہو کر ملکی مفاد کے لیے سوچنا ہوگا، یہ حکمران اور پاکستان اکٹھے نہیں چل سکتے، ہم ملک کو آئین اور قانون کی بالادستی کی طرف لے جانا چاہتے ہیں۔

سربراہ جے یو آئی کا کہنا تھا کہ پاکستان میں قرآن و سنت کے منافی قانون نہیں بن سکتا، ان حکمرانوں کی ہماری تہذیب سے کوئی وابستگی نہیں ہے۔

مقبوضہ کشمیر کے حوالے سے مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ ہم نے 70 سال کشمیریوں کی کیا جنگ لڑی ہے؟… کل سوچ رہے تھے کہ سری نگر کیسے لینا ہے، آج سوچتے ہیں مظفرآباد کیسے بچانا ہے؟…

ان کا کہنا تھا کہ بھارت نے مقبوضہ کشمیر میں غیرقانونی اقدام کیا، کشمیر کے لیے مل کر جدوجہد کرنے کی ضرورت ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

اسی طرح کی مزید پوسٹس

مینو