400 میں سے 80 طالبان قیدی رہا

افغانستان کی حکومت نے 400 طالبان قیدیوں کی رہائی کا عمل شروع کر دیا ہے۔

افغانستان کی نیشنل سیکیورٹی کونسل کے مطابق افغان حکومت نے 400 طالبان قیدیوں میں سے 80 کو آج رہا کر دیا، طالبان قیدیوں کو کابل کی پل چرخی جیل سے رہا کیا گیا۔

نیشنل سیکیورٹی کونسل افغانستان کے مطابق قیدیوں کی رہائی سے مکمل جنگ بندی کی کوششوں میں تیزی آئے گی۔

غیر ملکی خبر ایجنسی کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ رہائی پانے والے طالبان قیدیوں میں سے 44 ایسے قیدی ہیں جو بڑے حملوں میں ملوث رہ چکے ہیں۔

غیر ملکی خبر ایجنسی نے مزید بتایا ہے کہ حملوں میں ملوث قیدیوں کی رہائی پر امریکا سمیت دیگر ممالک تحفظات کا اظہار بھی کر چکے ہیں۔

غیر ملکی خبر ایجنسی کا یہ بھی کہنا ہے کہ افغان صدر اشرف غنی نے گزشتہ روز کہا تھا کہ ان 44 طالبان قیدیوں کی رہائی دنیا کے لیے خطرناک ہو گی۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو