پنجاب اور خیبر پختون خواہ کو بجٹ خسارے کا سامنا رہا

گذشتہ مالی سال 2019-20ء کے دوران پنجاب اور خیبرپختونخوا کو بجٹ خسارے کا سامنا رہا ہے۔

مالی سال 2019-20ء کے دوران پنجاب اور خیرپختونخوا، جہاں پی ٹی آئی کی حکومت ہے کو بجٹ خسارے کا سامنا رہا ہے جب کہ اس کے برعکس سندھ اور بلوچستان میں بجٹ سرپلس رہا۔

گذشتہ روز وزارت خزانہ کی جانب سے مالی سال 2019-20ء میں وفاقی اور صوبائی حکومتوں کے مالیاتی آپریشنز کی جامع سمری جاری کی ہے جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ پنجاب اور کے پی کے مالی حالات زوال پذیر رہے اور انھیں بجٹ خسارے کا سامنا کرنا پڑا۔

علاوہ ازیں اسٹیٹ بینک کی جانب سے گذشتہ مالی سال کے لیے رپورٹ کیے گئے 935.5 ارب روپے کے نفع پر بھی سوالیہ نشان ثبت ہوجاتا ہے۔ یہ غیرمعمولی منافع حکومت کے ہدف 406 بلین روپے سے 143 فیصد زیادہ ہے۔ مرکزی بینک کے ترجمان نے اس نفع کے ذرائع سے متعلق پوچھے گئے سوال کا جواب نہیں دیا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو