عثمانیوں کی لبنان کی سرزمین پر واپسی، عوام کا بھرپور استقبال، شہریت کی پیشکش

ترک نائب صدر فوات اوکتائے اور وزیر خارجہ میولوت چاوش اولو دیگر صدارتی وفد کے ہمراہ بیروت پہنچے تو وہاں پر بڑی تعداد میں لبنانی عوام نے ان کا استقبال کیا اور رجب طیب ایردوان، ترکی زندہ آباد کے نعرے لگائے۔

اس موقع پر نائب صدر ترکی فوات اوکتائے نے کہا کہ ہم اپنے صدر اور اپنی ملت کے اظہار افسوس اور اظہار تعزیت کے پیغام پہنچانے کے لیے یہاں پہنچے ہیں۔ وزیر خارجہ اور ترکی لبنان پارلیمانی دوست گروپ کے چئیرمین کے ہمراہ۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہم آپ کو دل کی اتہاہ گہرائیوں سے سلام پیش کرتے ہیں۔ رجب طیب ایردوان کے قلبی سلام کو آپ تک پہنچاتے ہیں۔ تمام لبنانیوں کو بچوں، جوانوں اور بوڑھوں سمیت تمام لبنانیوں کو۔

ترک وزیر خارجہ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج آپ سے اظہار یکجہتی کے لیے نائب صدر کے ساتھ یہاں ہیں۔ ہم لبنان میں سنی، شعیہ، عیسائی یا عرب، ترک وغیرہ میں کوئی فرق روا نہیں رکھ رہے اور تمام لبنانیوں کے ساتھ ہیں۔ تاہم لبنان سمیت دن بھر میں ہم وطنوں اور ہم نسلوں کو آخری دم تک اکیلا نہیں چھوڑیں گے۔

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ ان شاء اللہ “میں ترک ہوں، میں ترکمانی ہوں کہنے والے، شہریت نہ رکھنے والے اگر چاہیں تو ہم ان کو شہریت دے سکتے ہیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو