سنتھیا خیبر پختونخواہ حکومت کیلئے کام کرتی ہے

سنتھیا رچی نے بیان میں کہا ہے کہ 10 سال سے پاکستان میں ہوں اور خیبر پختونخوا حکومت کیلئے محکمہ آرکیالوجی اور مختلف این جی اوز کیلئے کام کرتی ہوں۔

مزید کہا کہ پیپلز پارٹی سے نہیں لڑنا چاہتی، بلاول کو مستقبل کا طاقتور لیڈر دیکھتی ہوں، ایمانداری کی بات ہے بلاول کا مستقبل کے رہنما کے طور پر ڈاکیومنٹری میں انٹرویو کرنا چاہتی تھی۔

سنتھیا رچی کا کہنا تھا کہ ایک تحقیقاتی ڈاکیومنٹری بنا رہی ہوں جس میں پیپلز پارٹی اور پشتون تحفظ موومنٹ (پی ٹی ایم) کے درمیان تعلقات اور رابطوں کی تحقیقات کررہی ہوں اور اِس تحقیقات میں پاکستان کے سیکیورٹی ادارے تعاون کررہے ہیں۔

سنتھیا کے ساتھی صحافیوں نے بھی ان کے حالیہ روئیے کی وجہ سے احتجاج کیا ہے.

خیال رہے کہ حال ہی میں امریکی شہری سنتھیا رچی نے سوشل میڈیا پر پیپلز پارٹی کی اعلیٰ قیادت کے خلاف الزامات کی بوچھاڑ کی تھی۔ جس میں انھوں نے سابق وزیر داخلہ رحمان ملک پر جنسی زیادتی جب کہ سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی اور سابق وفاقی وزیر مخدوم شہاب الدین پر دست درازی کا الزام عائد کیا تھا۔

سنتھیا رچی نے سابق وزیراعظم بینظیر بھٹو کے حوالے سے بھی نامناسب ٹوئٹ کی تھیں۔

امریکی خاتون کے الزامات پر پیپلز پارٹی نے قانونی چارہ جوئی کیلئے عدالت سے بھی رجوع کیا ہے جس پر سنتھیا کو 9 جون 2020ء کو جسٹس آف پیس کے سامنے پیش ہونے کا حکم دیا گیا ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

تبصرہ کرنے سے پہلے آپ کا لاگ ان ہونا ضروری ہے۔

اسی طرح کی مزید پوسٹس

مینو