پنجاب میں کالعدم جماعتوں اور تنظیموں کی فہرست جاری

ممنوعہ جماعتوں کو عطیات وصدقات دینے والوں کیخلاف بھی کارروائی ہوگی، پنجاب حکومت

لاہور: محکمہ داخلہ پنجاب نے کالعدم قرار دی گئی 79 جماعتوں اور تنظیموں کی فہرست جاری کر دی. رمضان المبارک کے دوران ان جماعتوں اور تنظیموں کو زکوۃ و عطیات نہ دیں۔

رمضان المبارک کے دوران مسلمان دل کھول کر صدقات و عطیات دیتے ہیں اور زکوۃ ادا کرتے ہیں۔ محکمہ داخلہ پنجاب نے کالعدم قرار دی گئی ایسی 79 جماعتوں کی فہرست جاری کی ہے، جن پر صدقات و عطیات اور چندہ جمع کرنے پر پابندی عائد ہے۔ شہریوں کو کہا گیا ہے کہ کالعدم جماعتوں، تنظیموں کو عطیات دینا اور ان کی معاونت قانون جرم ہے۔ شہری اپنی زکوۃ، عطیات ضرروت مندوں اور حقداروں کو دیں، زکوۃ و عطیات دیتے ہوئے اس بات کو یقنی بنائیں کہ آپ کے عطیات کالعدم تنظیموں تک نہ پہنچ سکیں۔

محکمہ داخلہ پنجاب کی طرف سے جاری کی گئی کالعدم جماعتوں کی فہرست لشکرجھنگوی، سپاہ محمد، جیش محمد، الرحمت ٹرسٹ بہاولپور اور الفرقان ٹرسٹ کراچی شامل ہیں، اسی طرح لشکرطیبہ، سپاہ صحابہ، تحریک جعفریہ پاکستان، تحریک نفاذ شریعت محمد، تحریک اسلامی، القاعدہ ، ملت اسلامیہ پاکستان ، خدام الاسلام (جیش محمد)، اسلامی تحریک سابق تحریک جعفریہ، جمعیت الانصار، جماعت الفرقان اور حزب التحریر بھی کالعدم جماعتوں میں شامل ہیں۔ خیرالناس انٹرنیشنل ٹرسٹ، بلوچستان لبریشن آرمی، اسلامک اسٹوڈنٹس موومنٹ، لشکر اسلامی، انصارالاسلام، حاجی نامدارگروپ، تحریک طالبان پاکستان بھی کالعدم ہیں۔

اس کے علاوہ بلوچستان ریپبلکن آرمی، بلوچستان لبریشن فرنٹ، لشکر بلوچستان، بلوچستان لبریشن یونائیٹڈ فرنٹ، بلوچستان مسلح دفاع، شیعہ طلبہ ایکشن کمیٹی گلگت، مرکز سبیل آرگنائزیشن گلگت، تنظیم نوجوانان اہل سنت گلگت، پیپلزامن کمیٹی لیاری، اہل سنت والجماعت، الحرمین فاؤنڈیشن، رابطہ ٹرسٹ، انجمن امامیہ گلگت بلتستان، مسلم اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن گلگت، تنظیم اہل سنت والجماعت گلگت اور بلوچستان بنیاد پرست آرمی بھی کالعدم ہیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

تبصرہ کرنے سے پہلے آپ کا لاگ ان ہونا ضروری ہے۔

اسی طرح کی مزید پوسٹس

مینو