کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے الزام پہ چین کا امریکا کو جواب

چین نے کورونا وائرس سے متعلق امریکا کے الزامات ایک بار پھر مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ چین کا وائرس کے پھیلاؤ میں کوئی کردار نہیں، امریکی رہنماؤں کا چین پر الزام لگانے کا سلسلہ بند ہونا چاہیے۔

چینی وزارت خارجہ کے ترجمان نے امریکا کی جانب سے الزامات پر ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ امریکا کو سمجھنا چاہیے اس کا دشمن چین نہیں وائرس ہے، چین کا وائرس کے پھیلاؤ میں کوئی کردار نہیں۔

ترجمان چینی وزارت خارجہ کا کہنا تھا کہ امریکی رہنماؤں کا چین پرالزام لگانے کا سلسلہ بند ہونا چاہیے، چین خود وائرس کا شکار ہوا۔ یہ انسانیت دشمن وائرس کہیں بھی حملہ کرسکتا ہے۔

ترجمان نے مزید کہا کہ متاثرہ ممالک مل کر وائرس پر قابو پانے کی کوششیں کریں۔

گذشتہ روز چینی وزارت خارجہ کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا تھا کہ چین دیگر ممالک میں حفاظتی لباس، ماسک، دستانے اور طبی آلات فراہم کررہا ہے، عالمی ادارہ صحت اور بیشتر ممالک کے ماہرین کہہ چکے کورونا وائرس لیب میں تیار نہیں ہوا، سازشی نظریات چینی اور امریکی سائنسدانوں میں تعاون میں رکاوٹ پیدا کررہے ہیں۔

ترجمان نے الزام تراشی کے ردعمل میں کہا تھا کہ امریکا کو اب جان لینا ہوگا اس کا دشمن کرونا وائرس ہے چین نہیں، ہمیں اس وقت صحت عامہ کے بہت بڑے بحران کا سامنا ہے، ایک دوسرے پر انگلیاں اٹھانے کے بجائے ہم آہنگی سے مدد کرنے کی ضرورت ہے۔

خیال رہے کہ امریکا نے چین پر الزام عائد کیا ہے کہ اس نے کرونا ازخود تیار کیا ہے اور امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے دھمکی دی تھی کہ کورونا وائرس کے پھیلاؤ کی غلطی اگر چین نے جانتے بوجھتے کی ہے تو پھراُس کے نتائج بھی بھگتنا ہوں گے.

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو