مسجد الحرام میں پہلی بار خواتین کارکنان خدمت کیلئے تعینات

مکہ المکرمہ: پہلی بار مسجد الحرام میں خواتین کارکنان کو خواتین زائرین کی خدمت پر تعینات کردیا گیا۔

سعودی میڈیا نے مسجد الحرام کی تصاویر جاری کردیں جن میں خواتین کارکنان زائرین کی خدمت میں مصروف عمل ہیں۔ باپردہ اہلکاروں کی جانب سے خواتین زائرین کو آب زم زم پلایا جارہا ہے۔ کارکنان نے فیروزی رنگ کا سوٹ زیب تن کیا ہوا ہے جس پر سفید رنگ کی واسکٹ پہنی ہوئی ہے اور سیاہ رنگ کا نقاب ہے جبکہ ہاتھوں میں سفید دستانے ہیں۔

گزشتہ ماہ سعودی عرب میں حج اور عمرے کے دوران مسجد الحرام میں سیکیورٹی کے انتظامات کے لیے بھی پہلی بار خاتون عسکری اہل کاروں کو تعینات کیا گیا تھا۔

واضح رہے کہ سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کے وژن 2023ء کے تحت مملکت میں خواتین کو خودمختار بنانے کی پالیسی پر عمل کیا جا رہا ہے جبکہ سیکیورٹی کے شعبے کے لیے بھی خواتین کو تربیت دی جا رہی ہے۔

مساجد کے امور کے جنرل ایوان صدر نے اپنے مختلف محکموں میں 15 سو خواتین کارکنان کو تعینات کیا ہے۔
خواتین کارکنان کے فرائض میں ان تمام خواتین نمازیوں کی خدمت اور دیکھ بھال کرنا ہے جو حضور کعبہ کی زیارت اور نماز کے لئے آتی ہیں۔
ٹیکنیکل اینڈ سروس افیئر ایجنسی میں مجموعی طور پر 600 خواتین کو بھرتی کیا گیا ہے۔
یاد رہے کہ اس سے قبل مکہ مکرمہ میں سیکیورٹی پر مامور خاتون اہلکار کے سوشل میڈیا پر چرچے رہے ہیں۔
سعودی وزارتِ داخلہ نے اپنےتصدیق شدہ ٹوئٹراکاؤنٹ پر حج و عمرے کیلئے آئے زائرین کی حفاظت کے پیشِ نظر نگرانی کی ڈیوٹی پر مامور خاتون اہلکار کی تصویر شیئر کی تھی۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو