کورونا وائرس کے باعث خام تیل کی قیمتوں میں بڑی کمی

عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمت 15 ڈالر فی بیرل سے بھی نیچے تک گر گئی ، جس کے بعد امریکی خام تیل کی قیمت 21 سال کی کم ترین سطح پر آگئی۔

تفصیلات کے مطابق کورونا وائرس کے باعث پیدا ہونے والی معاشی صورتحال کے بعد تیل کی قیمتوں میں گراوٹ کا سلسلہ جاری ہے۔ عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمت میں ہوشربا کمی ریکارڈ کی گئی۔ جس کے بعد امریکی خام تیل کو 21 سال کی کم ترین سطح پرٹریڈ ہوتے دیکھاگیا۔

امریکی خام تیل کی فی بیرل قیمت 14 ڈالر 47 سینٹ فی بیرل ہوگئی جبکہ برینٹ خام تیل کی قیمت 4.2 فیصد کی کمی ریکارڈکی گئی اور برینٹ خام تیل کی قیمت 26 ڈالر 91 سینٹ فی بیرل تک گرگئی۔

عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمتوں میں کمی کی وجہ طلب میں کمی ہے. جبکہ امریکی خام تیل کے ذخائر کی اسٹوریج کپیسٹی کم پڑنے لگی۔

خیال رہے گذشتہ ہفتے سعودی عرب اور روس کے درمیان تیل کی یومیہ پیداوار کم کرنے کا معاہدہ ہوا تاکہ تیل کی طلب میں بہتری اور قیمتیں مستحکم کی جا سکیں۔ اس پابندی کا اطلاق تمام تیل پیدا کرنے والے ممالک پر ہوتا ہے، تاہم اس فیصلے کے باوجود تیل کی قیمتوں میں مسلسل کمی ریکارڈ کی جارہی ہے۔

ماہرین نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ اگر تیل کی طلب میں اسی طرح کمی ہوتی رہی تو قیمتیں مستحکم نہیں ہو سکیں گی۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

تبصرہ کرنے سے پہلے آپ کا لاگ ان ہونا ضروری ہے۔

اسی طرح کی مزید پوسٹس

مینو