نیب کی شہباز شریف سے تفتیش کیمرے لگا کر عوام کو دکھائی جائے، شاہد خاقان عباسی

سابق وزیراعظم و مسلم لیگ (ن) کے سینیئر نائب صدر شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کے حوالے سے حکومتی ناکامیاں سامنے آنا شروع ہوگئی ہیں جبکہ ان نالائقیوں کی وجہ سے پاکستانی قوم کو مزید چیلنج کا سامنا ہوسکتا ہے۔

شاہد خاقان عباسی نے ترجمان مسلم لیگ (ن) مریم اورنگزیب اور مصدق ملک کے ہمراہ پریس کانفرنس میں کہا کہ پہلے حکومت سے لاک ڈاؤن کا فیصلہ نہیں ہو پارہا تھا لیکن آج لاک ڈاؤن میں نرمی کی وجہ سے شرح اموات بڑھ چکی ہے۔

شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ حکومت کہہ رہی ہے کہ بیماری کا سامنا کریں یا پھر بھوک کو برداشت کریں، کورونا وائرس کے حوالے سے حکومتی اقدامات مناسب نہیں، ان فیصلوں پر قومی اسمبلی کے اجلاس میں بحث ہونی چاہیے۔

سابق وزیراعظم نے شہباز شریف کی قومی احتساب بیورو (نیب) میں طلبی کے نوٹس کے حوالے سے کہا کہ نیب نے شہبازشریف کو طلب کیا، وہ کینسر کے مریض ہیں، ایسی کیا عجلت ہے کہ نیب انتظار نہیں کرسکتا؟

انہوں نے مزید کہا کہ نیب نے شہباز شریف پر کئی مقدمات بنائے لیکن کسی میں کچھ نہیں ملا، شہباز شریف سے نیب نے جتنی ضرورت تھی تحقیقات کی ہیں اور انہوں نے نیب کے مانگنے پر تمام دستاویزات مہیا کی ہیں۔

شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ شہباز شریف کے ساتھ جو ہو رہا ہے، یہ بدنیتی اور نالائقی ہے جو حکومت کی گھٹیا سوچ کی عکاس ہے، شہباز شریف کو بلا کر جو تفتیش کرنی ہے وہ کیمرے لگا کر عوام کو دکھائی جائے۔

خیال رہے کہ ملک میں کورونا وائرس کے کیسز میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے اور اب تک 181 افراد جاں بحق ہوچکے ہیں جبکہ متاثرہ مریضوں کی تعداد ساڑھے 8 ہزار سے تجاوز کرچکی ہے۔

دوسری جانب قومی احتساب بیورو (نیب) نے شہباز شریف کو آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں 22 اپریل کو دوبارہ طلب کیا ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

تبصرہ کرنے سے پہلے آپ کا لاگ ان ہونا ضروری ہے۔

اسی طرح کی مزید پوسٹس

مینو