سائبر کرمنلز نے شہریوں کو بلیک میل کرنے کا نیا طریقہ نکال لیا, ایف آئی اے نے ہدایات جاری کر دیں

وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) کا کہنا ہے کہ سائبر کرمنلز نے سادہ لوح شہریوں کو بلیک میل کرنے کا نیا طریقہ نکال لیا ہے لہذا شہری کسی بھی مشکل سے بچنے کے لیے احتیاط کریں۔

کورونا علاج اور احساس کیش پروگرام کے تناظر میں سائبر کرمنلز سرگرم ہو گئے ہیں اور نت نئے طریقوں سے لوگوں کو بے وقوف بنا کر رقم بٹور رہے ہیں۔ایف آئی اے کے سائبر کرائم سرکل کے مطابق سائبر کرمنلز شہریوں سے رابطہ کرکے ایس ایم ایس کوڈ مانگتے ہیں جو درحقیقت واٹس اپ ویری فکیشن ایس ایم ایس ہوتا ہے۔

سائبرکرائم سرکل کا کہنا ہے کہ کرمنلز متاثرہ شخص سے رابطہ کر کے ایزی پیسہ مانگتے ہیں۔سائبر کرائم سرکل کے مطابق چند دنوں میں اس طرح کے کیس میں 10 فیصد اضافہ ہوا ہے، گروہ کے زیادہ تر ٹارگٹ افراد مڈل کلاس گھرانوں سے تعلق رکھتے ہیں۔ اس حوالے سے ایف آئی اے نے الرٹ جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ شہری اپنا کسی قسم کا کوڈ کسی کو نہ دیں، شہری بلیک میلنگ سے بچنے کے لیے کسی نامعلوم شخص کو کوڈ نہ بتائیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

تبصرہ کرنے سے پہلے آپ کا لاگ ان ہونا ضروری ہے۔

اسی طرح کی مزید پوسٹس

مینو