کون سی غذا کھانے سے مدافعتی نظام کمزور ہوسکتا ہے؟…

کورونا وائرس کے پیشِ نظر لاک ڈاؤن کے دوران گھروں میں رہ کرچکنائی اور جنک فوڈ سمیت چٹ پٹے اور تَلے ہوئے کھانوں کا بے دریغ استعمال آپ کا دشمن ہے۔

لاک ڈاؤن نے لوگوں کو گھروں تک محدود کر دیا ہے اور ایسے میں بہت سے لوگوں نے خود کو صرف کھانے اور سونے تک محدود کر لیا ہے جبکہ چکنائی والی، تَلی ہوئی اشیاء اور جنک فوڈ کا استعمال بڑھا دیا ہے۔

معمولاتِ زندگی ختم ہونے سے ان کی جسمانی حرکت بھی ختم ہو کر رہ گئی. طبی ماہرین نے ایسےلوگوں کو خبردار کیا ہے کہ وہ اپنے ساتھ دشمنی نہ کریں بلکہ اپنا لائف اسٹائل تبدیل کریں۔

طبی ماہرین نے لاک ڈاؤن کے دوران گھروں میں محصور لوگوں کو خبردار کیا ہےکہ یہ لائف اسٹائل موٹاپے کا سبب بن سکتا ہے. جس سے نظامِ قوتِ مدافعت کمزور ہوجاتا ہے اور ایسے افراد کورونا وائرس کا آسان شکار بن سکتے ہیں۔

اس ضمن میں ماہر امراض برائے موٹاپا ڈاکٹر معاذ الحسن کا کہنا ہےکہ لاک ڈاؤن کے دوران گھروں میں رہ کر ہلکی پھلکی ورزش بچوں کے ساتھ کھیل کود اور دیگر صحت مندانہ سرگرمیاں جاری رکھیں اور نیند اورخوراک اپنے وقت پر لیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ موٹاپے کے شکار لوگوں کا مدافعتی نظام کمزور پڑ جاتا ہے. جس کے باعث وہ کورونا کا آسان شکار بن جاتے ہیں۔

دوسری جانب ماہر غذا اور شیف ڈاکٹر رابعہ شکیل کا کہنا تھاکہ لوگ دہی، دال، چنے، لیموں، سبز پتوں والی سبزیوں جبکہ پھلوں میں مالٹے اور کیلے کا استعمال بڑھا دیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

تبصرہ کرنے سے پہلے آپ کا لاگ ان ہونا ضروری ہے۔

اسی طرح کی مزید پوسٹس

مینو