چیمبر آف کامرس نے کراچی کو ’آفت زدہ‘ قرار دینے کا مطالبہ کردیا

بارشوں سے شہر میں ہونے والے نقصانات پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئےکراچی چیمبر آف کامرس نے شہر قائد کو فوری طور پر ”آفات زدہ“ قرار دینے کامطالبہ کر دیا ہے۔

کراچی چیمبر کے صدر آغا شہاب خان نے حکومت پر زور دیا ہے کہ وہ امدادی سرگرمیوں کو تیز کرے کیوں کہ متعدد علاقوں میں سینکڑوں مکانات ڈوب گئے ہیں بالخصوص نشیبی علاقوں میں واقع مکانات مکمل طور پر بہہ گئے ہیں اور ان کے علاقوں کے چاروں طرف بڑے پیمانے پر سیلابی صورتحال کی وجہ سے ایک بہت بڑی آبادی گھروں کی چھتوں پر پھنس کر رہ گئی ہے۔

کراچی کی غریب آبادی معاشرے کا سب سے زیادہ متاثر طبقہ ہے کیونکہ وہ منگل کی غیر معمولی موسلا دھار بارش کے دوران اپنے گھروں اور دیگر تمام سامان سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں لہٰذا وفاقی اور صوبائی حکومتوں کو فوری طور پر مالی مدد کی صورت میں متاثرین کو ریلیف فراہم کرنا چاہیے اور ایسے تمام متاثرین کو رہائش کے لیے متبادل جگہ اور کھانے پینے کی اشیاء بھی مہیا کی جائیں۔

کراچی چیمبر نے مطالبہ کیا کہ تباہ شدہ گھروں کو حکومت کی مالی مدد سے دوبارہ تعمیر نہیں کیا جاتا کیونکہ عوام کی املاک کا تحفظ حکومت کی ذمہ داری ہے لہٰذا قدرتی آفات سے غریب عوام کو ہونے والی تمام نقصانات کا پورا معاوضہ حکومت برداشت کرے۔

صدر کراچی چیمبر نے کہا کہ شہر کے انتہائی خستہ حال انفرااسٹرکچر کی تعمیر نو کا کام اگلے پانچ سال تک کے لیے فوج کی نگرانی میں این ڈی ایم اے اور ایف ڈبلیو او کو دینے کا مطالبہ کررہے ہیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو