پی ڈی ایم اجلاس کی اندرونی کہانی

اپوزیشن اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کے سربراہی اجلاس کی اندرونی کہانی سامنے آگئی۔

ذرائع کے مطابق پی ڈی ایم نے حکومت سے کسی قسم کے مذاکرات نہ کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔

ذرائع نے بتایا کہ استعفے چاروں صوبائی اسمبلیوں اور قومی اسمبلی سے دیے جائیں گے تاہم سینیٹ سے استعفے نہیں دیے جائیں گے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ پی ڈی ایم میں شامل تمام جماعتیں نئے الیکشن پر متفق ہوگئی ہیں جب کہ اس حوالے سے سینیئر رہنما نے کہا ہے کہ کہ آزاد اور شفاف انتخابات کا انعقاد الیکشن کمیشن کا کام ہے، الیکشن کمیشن تمام جماعتوں سے مشاورت کرسکتا ہے اور ایسی روایت بھی موجود ہے۔

ذرائع کے مطابق اسٹیئرنگ کمیٹی میں اپوزیشن احتجاج کے اگلے مرحلے کے طریقہ کار کا تعین کرے گی۔

خیال رہے کہ پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کے سربراہی اجلاس کے بعد پریس کانفرنس میں اتحاد کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے تمام جماعتوں کے قومی اور صوبائی اسمبلیوں کے ارکان کو استعفے پارٹی قیادت کو جمع کرانے کی ہدایت کی ہے۔

انہوں نے ہدایت کی کہ 31 دسمبر تک تمام جماعتوں کے قومی و صوبائی اسمبلیوں کے ارکان پارٹی قائدین کے پاس استعفے جمع کروا دیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو