پنجاب میں کورونا کے 90 فیصد مریض معمولی نوعیت کے ہیں

ملتان: وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد کا کہنا ہےکہ صوبے کے مریضوں میں سے 90 فیصد معمولی نوعیت کے ہیں۔

ملتان میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے یاسمین راشد نے بتایا کہ نشتر اسپتال کے 53 ڈاکٹروں میں سے27 ڈاکٹروں کے ٹیسٹ مثبت اور 26 کے منفی آئے ہیں جبکہ 3800 ڈاکٹرز اور طبی عملے کے ٹیسٹ کرنے ہیں، اس ہفتے کے آخر تک روزانہ 5 ہزار ٹیسٹ کی صلاحیت ہوجائے گی۔

انہوں نے کہا کہ پنجاب میں کورونا وائرس کے مصدقہ کیسز کی تعداد 4227 ہے جن میں سے 19مریضوں کی حالت نازک ہے، صوبے کے مریضوں میں سے 90 فیصد معمولی نوعیت کے ہیں، جنوبی پنجاب میں کورونا کے 183 مریض صحتیاب ہو چکے ہیں۔

وزیر صحت کا کہنا تھا کہ پنجاب میں 140 چھوٹے بڑے علاقوں میں مکمل لاک ڈاؤن کیا ہوا ہے، جی ٹی روڈ کورونا وائرس سے متعلق ہمارا ہاٹ اسپاٹ ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ وزیر خارجہ کو کسی نے غلط بریف کیا. ان کے تحفظات دور کرنے ملتان آئی ہوں، شاہ صاحب نے لیب میں بہتری نہ لانے کی بات کی لیکن ملتان میں 3608 ٹیسٹ کیے گئے اور نشتر اسپتال سے وینٹی لیٹر لے کر کہیں اور منتقل نہیں کیے گئے۔

یاسمین راشد کا کہنا تھا کہ ڈاکٹرز کو این 95 ماسک دے دیے گئے ہیں، ایک این 95 ماسک سے ایک ہفتہ گزارا ہوجاتا ہے، ہر ڈاکٹر کو این 95 ماسک دیا گیا ہے، جو ہر ہفتے تبدیل کیا جاتا ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو