پانی کی کمی اور غذائی قلت کے باعث کمزور دماغ کے بچوں کی پیدائش میں اضافہ

تھر میں پانی کی کمی اور غذائی قلت کے باعث کمزور دماغ کے بچوں کی پیدائش میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے۔

سندھ میں دوران حمل دماغ اور ریڑھ کی ہڈی میں پیدائشی نقص کے باعث معذور بچوں کی تعداد میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے۔

ہائیڈروسیفالس نامی اس بیماری میں مبتلا بچوں کے پیدائشی طور پر سر بڑے ہوتے ہیں جس کی وجہ دماغ میں پانی بھر جانا ہے اور اگر اس کا علاج نہ ہو تو بچے ذہنی اور جسمانی طورپر معذور بھی ہو جاتے ہیں۔

اس حوالے سے لیاقت یونیورسٹی کے پروفیسر ڈاکٹر ریاض راجہ کا کہنا ہے کہ لیاقت یونیورسٹی جامشورو کے تحت تھر پارکر میں پہلا طبی نیورو سرجری کیمپ بھی لگایا گیا ہے جس میں 140 بچوں کے آپریشن کیے جا رہے ہیں۔

ماہرین دماغی امراض کا کہنا ہے کہ حکومت کو چاہیے کہ جدید ٹیکنالوجی سے مزین الٹرا ساؤنڈ سرکاری اسپتالوں میں دئیے جائیں تاکہ دوران حمل ہی اس بیماری کا پتہ چلا کر بچوں کو بیماری سے محفوط بنایا جا سکے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو