نیب کی نوازشریف کے دائمی وارنٹ گرفتاری جاری کرنے کی استدعا

اسلام آباد ہائیکورٹ میں ایون فیلڈ ریفرنس، مریم نواز اور کیپٹن (ر) صفدر کی سزا کے خلاف اپیلوں پر سماعت ہوئی۔

قومی احتساب بیورو (نیب) نے نوازشریف کے دائمی وارنٹ گرفتاری جاری کرنے کی استدعا کی۔

اسلام آباد ہائیکورٹ میں جسٹس عامر فاروق اور جسٹس محسن اختر کیانی نے ایون فیلڈ ریفرنس میں مریم نواز اور کیپٹن صفدر کی سزا کے خلاف اپیلوں پر سماعت کی۔

نیب حکام تاخیر سے عدالت میں پیش ہوئے جس پر جسٹس عامر فاروق نے حیرانی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ کیا نیب کو کورونا ہوگیا؟

جسٹس عامر فاروق نے ریمارکس دیے کہ نوازشریف العزیزیہ ریفرنس میں اشتہاری ہوچکے ہیں تو عدالتی معاونت کون کرے؟

نیب اور نوازشریف کے وکیل عدالت کی معاونت کریں کہ کیا خواجہ حارث کو نمائندہ کیا جا سکتا ہے؟

عدالت نے ریمارکس دیے کہ کورونا کی وجہ سے صورتحال کشیدہ ہے اس لیے عدالت میں زیادہ بھیڑ نہ کریں، کورونا کے باعث مریم نواز اور کیپٹن ریٹائرڈ صفدر درخواست دے دیں، انہیں حاضری سے استثنیٰ مل جائے گی۔

بعد ازاں سماعت ایک ماہ تک ملتوی کردی گئی۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو