ماحولیاتی تبدیلیوں پر مذاکرات سے کچھ تبدیل نہیں ہو گا

ماحولیاتی تحفظ کے لئے سرگرم سماجی کارکان کا کہنا ہے کہ دنیا کو ماحولیاتی تبدیلی کے چیلنج کو شکست دینے کے لیے پوری معاشی جانچ پڑتال اور نظر ثانی کی ضرورت ہے، ماحولیاتی تبدیلیوں پر مذاکرات، بات چیت اور اجلاس کچھ تبدیل نہیں کرسکتے۔ اس وقت ہمیں ماحولیاتی تبدیلی کے چیلنج کو اپنے وجود اور بقا کو درپیش بحرانی صورتِ حال کے طور پر دیکھنا ہوگا۔

جب تک ماحولیانی تبدیلی کے چیلنج کوایک بحران کے طور پر نہیں دیکھا جائے گا اُس وقت تک ہم جتنی چاہیں ماحولیاتی تبدیلیوں پر مذاکرات، بات چیت اور اجلاس کر لیں، کچھ بھی تبدیل نہیں ہو گا۔آج پوری دنیا میں لاکھوں لوگ آب و ہوا کی ہنگامی صورتحال سے متعلق عالمی اقدامات کا مطالبہ کرنے کے لیے مظاہرے ہو رہے ہیں اور عالمی رہنماؤں سے مطالبات ہو رہے ہیں کہ ماحول دوست اقدامات کئے جائیں۔

آب و ہوا میں تبدیلی انسانوں کی وجہ سے ہے۔ سیاستدان اس حقیقت کو جاننے کے باوجود اِس مسئلے پر بات کرنے میں ناکام ہیں جو پوری دنیا کی شکل ہی تبدیل کر سکتا ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو