فیری سروس شروع کرنے کی اجازت

ملکی سمندر سے فیری سروس شروع کرنے کی اجازت دے دی۔

آج پاکستان کے لیے تاریخی دن ہے کہ بلیو اکانومی وژن کے تحت دنیا بھر کے ممکنہ مقامات کے لیے فیری سروس شروع کرنے کی اجازت دی گئی ہے۔ سمندر کے ذریعے سفر کرنے والوں کے لیے اب سمندری سرحدیں کھلی ہیں۔

وفاقی وزیر برائے بحری امور، علی زیدی کا کہنا ہے کہ کابینہ میں زائرین کی ضروریات کے حوالے سے بات ہوئی ہے اور زائرین فیری سروس کے ذریعے جا سکیں گے جو گوادر پورٹ سے شروع ہوگی۔

وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کے اجلاس کے بعد، وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات سینیٹر شبلی فراز نے میڈیا کو بریفنگ دی۔

شبلی فراز نے کہا کہ وفاقی کابینہ نے زائرین کی سہولت کے لیے فیری سروس شروع کرنے کی منظوری دی ہے۔

انہوں نے بتایا کہ اس مقصد کے لیے کراچی پورٹ قاسم اور گوادر پورٹ پر متعلقہ پورٹ اتھارٹیز کی جانب سے مسافروں کی سہولت کے لیے امیگریشن، کسٹم سمیت تمام سہولیات فراہم کی جائیں گی۔

ان کا کہنا تھا کہ وفاقی دارالحکومت کیلئے کیپیٹل ماس ٹرانزٹ اتھارٹی اور اسلام آباد کے مختلف زونز میں غیر قانونی سوسائٹیز میں ہونے والی تعمیرات، گیس اور بجلی کے کنکشن پر عائد پابندی اٹھانے کے لیے کمیٹیوں کے قیام اور بہترین کارکردگی پر ایم ڈی بیت المال کی مدت ملازمت میں توسیع کی منظوری بھی دے دی ہے۔

اجلاس میں نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی (نیپرا) نے سالانہ رپورٹ کابینہ کو پیش کی جس کے مطابق کم کارکردگی والے پاور پلانٹس کو بند کیا جا رہا ہے۔

کابینہ نے حالیہ بارشوں کے نتیجے میں ملک کے مختلف حصوں میں ہونے والے جانی اور مالی نقصان خصوصاً اندرون سندھ میں ہونے والی تباہ کاریوں اور فصلوں کو پہنچنے والے نقصانات پر تشویش کا اظہار کیا۔

وزیرِاعظم نے این ڈی ایم اے کو ذمہ داری سونپی ہے کہ صوبائی حکومتوں سے مل کر ملک کے مختلف حصوں میں ہونے والے نقصانات کا جائزہ لیا جائے تاکہ متاثرین کو ریلیف کی فراہمی کے حوالے سے جامع حکمت عملی ترتیب دی جا سکے۔

کابینہ اجلاس میں کراچی ٹرانسفارمیشن پلان اور کراچی کے مسائل کو مستقل بنیادوں پر حل کرنے کے حوالے سے وفاقی حکومت کی معاونت پر بات کرتے ہوئے وزیرِاعظم نے کہا کہ کراچی ملکی معیشت کے لیے انجن آف گروتھ کا کردار ادا کرتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ کراچی کی ترقی ملک کی ترقی ہےلہٰذا وفاقی حکومت کراچی کے مسائل کے حل کے ضمن میں اپنا کردار ادا کرنے کے حوالے سے پر عزم ہے۔

کابینہ نے اقتصادی رابطہ کمیٹی کے 27 اگست 2020ء کے اجلاس میں لیے گئے فیصلوں کی توثیق کی جبکہ کابینہ کمیٹی برائے توانائی کے 27 اگست 2020ء کے اجلاس میں لیے گئے فیصلوں کی بھی توثیق کی گئی۔

وفاقی کابینہ نے سندھ میں رینجرز کی تعیناتی میں مزید ایک سال کی توسیع کرنے کی بھی منظوری دےدی۔

کابینہ کو اسلام آباد میں معیاری سہولتوں سے آراستہ ماڈل پناہ گاہوں کی تعمیر پر بریفنگ دی گئی۔

وزیرِاعظم نے کہا کہ یہ خیال کیا جاتا ہے عوام کی خوشحال کے بعد فلاحی ریاست کا قیام ممکن ہوتا ہے، اس کے برعکس ان کا ماننا ہے کہ فلاحی ریاست کا قیام عوام کی خوشحالی کا باعث بنتا ہے۔

چیف کمشنر اسلام آباد اور آئی جی اسلام آباد نے ایس ای سی پی کے ایڈیشنل جوائنٹ ڈائریکٹر ساجد گوندل کی گمشدگی اور بازیابی کے حوالے سے اب تک کی جانے والی کوششوں سے آگاہ کیا۔

وزیرِاعظم نے چیف کمشنر اور آئی جی اسلام آباد کو ہدایت کی کہ ساجد گوندل کی بازیابی کے لیے ہر ممکن کوشش کی جائے۔

کابینہ نے اس حوالے سے اعلیٰ سطح کی کمیٹی تشکیل دی ہے تاکہ وہ ان واقعات کا جائزہ لے کر ان کے مستقل تدارک کے لیے سفارشات پیش کرے۔

اس کمیٹی میں وزیرِ قانون، مشیر داخلہ، چیف کمشنر ، آئی جی اسلام آباد و دیگر متعلقین شامل ہوں گے۔

انہوں نے کہا کہ پنجاب میں آئی جی کی تبدیلی معمول کی بات ہے جو بھی افسر کارکردگی نہیں دکھائے گا اسے ہٹا دیا جائے گا،کسی کو بھی ترقی کی راہ میں حائل نہیں ہونے دیں گے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو