2 سال بعد غیر ملکی عازمین حج سرزمین مقدس پہنچنا شروع

پہلی پرواز کے خوش نصیب مسافر آیندہ ہفتوں میں مکہ مکرمہ کے لیے روانہ ہوں گے۔  (فوٹو فائل)

پہلی پرواز کے خوش نصیب مسافر آیندہ ہفتوں میں مکہ مکرمہ کے لیے روانہ ہوں گے۔ (فوٹو فائل)

ریاض: سعودی عرب میں کورونا وائرس کے تناظر میں عائد پابندیوں کے 2 سالہ عرصے کے بعد غیر ملکی عازمین کی آمد کا باقاعدہ آغاز ہوگیا۔

رواں برس حج کے سلسلے میں پہلی غیر ملکی پرواز مدینہ ائرپورٹ پہنچی، جہاں حکام نے ضیوف الرحمن کا استقبال کیا۔ یاد رہے کہ 2 برس سے کورونا پابندیوں کے باعث حج کو صرف مقامی عازمین تک محدود رکھا گیا تھا، تاہم رواں برس اپریل میں سعودی عرب کی جانب سے باقاعدہ اعلان کیا گیا کہ اس سال دنیا بھر سے 10 لاکھ عازمین حج ادا کر سکیں گے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق انڈونیشیا سے پہنچنے والی پہلی پرواز کے خوش نصیب مسافرآیندہ ہفتوں میں مکہ مکرمہ کے لیے روانہ ہوں گے۔ سعودی حکام نے طویل پابندیوں کے بعد عازمین حج کی آمد کو باعث خوشی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ مہمانوں کے لیے سہولیات کی فراہمی کو ہرممکن طور پر یقینی بنایا جائے گا۔

یہ خبر بھی پڑھیے: حج 2022 کے لئے تیاریاں مکمل کرلی گئیں

واضح رہے کہ رواں برس سعودی عرب نے حج کے لیے 65 سال سے بڑی عمر کے افراد پر پابندی عائد کی ہے جب کہ شرائط پر پورا اترنے والوں کے لیے بھی ویکسین کی تمام منظور شدہ خوراکیں لینا لازم قرار دیا گیا ہے۔