سرحدی تنازع، چین بھارت وزرائے دفاع کی ملاقات

چین اور بھارت کے درمیان جاری سرحدی تنازع کو حل کرنے کے لیے دونوں ممالک کے وزرائے دفاع کے درمیان ملاقات ہوئی ہے۔

چینی سرکاری میڈیا کے مطابق چین کے وزیرِ دفاع وئے فینگ اور بھارت کے وزیرِ دفاع راج ناتھ کی یہ ملاقات روس کے دارالحکومت ماسکو میں گزشتہ روز ہوئی۔

چین اور بھارت کے وزرائے دفاع نے ماسکو میں ہونے والے ایس سی او اجلاس کے دوران سائیڈ لائن ملاقات کی ہے۔

ماسکو میں 10 ستمبر کو ہونے والے ایس سی او اجلاس کے دوران بھارت اور چین کے وزرائے خارجہ کے درمیان ملاقات بھی متوقع ہے۔

چین بھارت سرحدی کشیدگی کے بعد دونوں ممالک میں یہ پہلا اعلیٰ سطح کا رابطہ ہے۔

چینی وزیرِ دفاع وئے فینگ کا گزشتہ روز کی ملاقات کے حوالے سے ایک بیان میں کہنا ہے کہ چین بھارت سرحدی کشیدگی کی پوری ذمے داری بھارت پر عائد ہے، چینی فوج چین کی علاقائی سالمیت کے تحفظ کے لیے باصلاحیت اور پرُاعتماد ہے۔

چینی وزیر دفاع کا یہ بھی کہنا ہے کہ چینی سر زمین کے ایک ایک انچ کا دفاع کریں گے۔

ماسکو میں دونوں ممالک کے وزرائے دفاع کی ملاقات کے حوالے سے بھارتی وزارتِ دفاع کا ایک بیان میں کہنا ہے کہ اس ملاقات میں وزیرِ دفاع نے واضح کیا کہ چینی فوج کے اقدامات 2 طرفہ معاہدوں کی خلاف ورزی ہیں۔

بھارتی وزیرِ دفاع راج ناتھ کا کہنا ہے کہ بھارت چین سرحدی علاقوں میں امن کا قیام 2 طرفہ تعلقات میں پیش رفت کے لیے ضروری ہے، دونوں ملکوں کو اختلافات کو تنازع نہیں بننے دینا چاہیے۔

بھارتی وزیرِ دفاع نے یہ بھی کہا ہے کہ فریقین کو ایل اے سی پر کشیدگی میں کمی کے لیے سفارتی اور فوجی سطح پر مذاکرات جاری رکھنے چاہئیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو